سراج الحق کا مسجد منصورہ میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب

نواز شریف سمیت اسلامی ممالک کے حکمرانوں کو عزت مغرب اور امریکہ سے وفاداری کی بجائے حضرت محمد ﷺ سے اظہارمحبت کے بدلے میں ملے گی،توہین رسالت ﷺ جیسے گھناﺅنے جرم پر بھی اگر کسی کی ایمانی غیرت نہیں جاگتی تو اسے اپنے ایمان کی فکرکرنی چاہئے۔سراج الحق کا مسجد منصورہ میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب

pic 1

 
لاہور 30جنوری 2015ء
   امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ نواز شریف سمیت اسلامی ممالک کے حکمرانوں کو عزت مغرب اور امریکہ سے وفاداری کی بجائے حضرت محمد ﷺ سے اظہارمحبت کے بدلے میں ملے گی،توہین رسالت ﷺ جیسے گھناﺅنے جرم پر بھی اگر کسی کی ایمانی غیرت نہیں جاگتی تو اسے اپنے ایمان کی فکر کرنی چاہئے ،فرانس میں توہین آمیز خاکوں پر اسلامی ممالک کے حکومتی ایوانوں میں قبرستان کی سی خاموشی چھائی رہی جبکہ غیرت مند مسلمان سڑکوں پر احتجاج کرتے رہے ،ہم صرف حضرت محمد ﷺ اور قرآن عظیم کی نہیں بلکہ تمام انبیاءاور آسمانی کتب کے احترام کی بات کرتے ہیں ،عالمی امن کو یقینی بنانے کیلئے بین المذاہب ہم آہنگی اور ڈائیلاگ ضروری ہے ،ابنیاءاور کتب سماوی کی توہین کو عالمی جرم قرار دیا جائے اور ایسی قانون سازی کی جائے کہ کسی کو بھی مذہب اور انبیاءکی توہین کی جرا ¿ت نہ ہو۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد منصورہ میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔
     سراج الحق نے کہا ہے کہ پیغمبر اسلام ﷺ کی شان میں گستاخیاں اور قرآن کریم پر مقدمہ چلا کر نذر آتش کرنے جیسے واقعات کا تسلسل عالمی امن کو تہ وبالا کرنے کیلئے صیہونیوں کا سوچا سمجھا منصوبہ ہے ،صلیبی جنگوں کی پشت پر ہمیشہ صیہونی سازشیں کارفرمارہی ہیں ،یہودی مسلمانوں اور مسیحیوں کو لڑانے کیلئے خفیہ سازشوں میں مصروف رہتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ توہین رسالت ﷺ کرکے دنیا بھر کے ڈیڑھ ارب سے زائد مسلمانوں کے دلوں کو زخمی کیا گیا ،لیکن اس بدترین دہشت گردی کو روکنے کیلئے اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کے کسی عالمی ادارے کی طرف سے کوئی آواز نہیں اٹھائی گئی،انہوں نے مسلم ممالک کے حکمرانوں کی بزدلانہ خاموشی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ لوگ قیامت کے روز حضور ﷺ کے سامنے کیا منہ لیکر جائیں گے،انہوں نے کہا کہ ہم گستاخان رسول ﷺ کا تعاقب کرتے رہیں گے اور اس وقت تک ان کا پیچھا نہیں چھوڑیں گے جب تک کہ اپنے پیغمبر ﷺ اور کتاب اللہ کو ان کی ناپاک جسارتوں سے محفوظ نہیں کرلیتے ۔انہوں نے کہا کہ حضور ﷺ کی عزت و ناموس کے تحفظ کیلئے جانوں کا نذرانہ پیش کرنا لاکھوں مسلمان اپنے لئے سعادت سمجھتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک نظریاتی ملک اور اسلام کے نام پر معرض وجود میں آنے والی پہلی اسلامی ریاست ہے ،مگر اس کے حکمرانوں کا رویہ انتہائی بزدلانہ اور قابل مذمت ہے ، اس مسئلہ پر اور کسی طرف سے آواز کا نہ اٹھایا جانا اتنا تکلیف دہ نہیں جتنی تکلیف پاکستانی حکمرانوں کی خاموشی سے عوام کو پہنچی ہے ۔
    سراج الحق نے تمام سیاسی و دینی جماعتوں سے اپیل کی کہ حضور ﷺ کے ناموس کے تحفظ کیلئے ذاتی و پارٹی مفادات سے بالا تر ہوکر سب متحد ہوجائیں ،حضرت محمد ﷺ کی عزت و عظمت سے بڑھ کرہمیں کوئی چیز عزیز نہیں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s