سراج الحق کا رحیم یار خان میں ڈسٹرکٹ بار سے خطاب ؍ میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو

ملک دشمن قوتیں پاکستان سمیت عالم اسلام میں ترقی و خوشحالی کے عمل کو روکنے کیلئے جمہوریت کے راستہ میں رکاوٹیں کھڑی کرکے آمریتوں کو سپورٹ کرتے ہیں۔پاکستان میں جمہوری عمل کو باربا رروکا گیااور جنریلوں کی مدد کی گئی ۔سراج الحق کا رحیم یار خان میں ڈسٹرکٹ بار سے خطاب ؍ میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو

1525457_749674845152233_5411255128279112239_n10259327_749675555152162_2658101931619752821_n
لاہور2فروری 2015
امیرجماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک دشمن قوتیں پاکستان سمیت عالم اسلام میں ترقی و خوشحالی کے عمل کو روکنے کیلئے جمہوریت کے راستہ میں رکاوٹیں کھڑی کرکے آمریتوں کو سپورٹ کرتے ہیں۔پاکستان میں جمہوری عمل کو باربا رروکا گیااور جنریلوں کی مدد کی گئی ۔ہم نے گزشتہ سال نومبر میں 35ممالک کی اسلامی تحریکوں کو اکٹھا کیا جنہوں نے اسلامی نظام کے نفاذ کیلئے اپنے ممالک میں جمہوری جدوجہد کا اعلان کیالیکن ہمارے امن کے پیغام کو عوام تک نہیں پہنچنے دیا جاتا۔ ملک میں لاقانونیت کا راج ہے ۔ملک بنے 68سال گزر گئے لیکن یہاں قانون کی حکمرانی قائم نہیں ہونے دی گئی ۔امیر اور غریب کیلئے علیحدہ قوانین ہیں ۔امیر اربوں روپے کی کرپشن کے باوجود قانون کے شکنجے سے آزاد رہتا ہے ۔جاگیرداروں وڈیروں اور اشرافیہ نے پورے نظام کو یرغمال بنا رکھا ہے ،وسائل اور اقتدار کے ایوانوں پر اشرافیہ قابض ہے جسے عوام کی پریشانی اور بدحالی سے کوئی سروکار نہیں ۔پشاور اور شکار پور کے واقعات سے شرمندگی ہوئی۔اسلامی نظام کے نفاذ میں مغرب اور یورپ کے علاوہ ہمارا اپناکردار رکاوٹ ہے ۔ سودی معیشت ،استعماری سیاست اور ہندوانہ کلچر نے ہماری شناخت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے ۔ بلوچستان کے مسئلہ کو فوری حل کرنے کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹرکٹ بار رحیم یار خان سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے ہوئے ۔ڈسٹرکٹ بار سے ممبر پنجاب بار کونسل سردارعبدالباسط ایڈووکیٹ صدر بارجام عبدالمجید مصطفائی ایڈووکیٹ اور سیکرٹری بار رانا شیرازایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا ۔ سراج الحق نے کہاکہ پاکستان عالم اسلام کا دھڑکتا دل ہے ،دنیا میں اسلام کی نشاۃ ثانیہ کیلئے پاکستان میں قرآن و سنت کے نظام کا نفاذضروری ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں جہا لت ،مہنگائی ،بے روز گاری ،لوڈ شیڈنگ اور کرپشن 68سال سے اقتدار پر قابض استعمارکے غلام حکمرانوں کی وجہ سے ہے ۔ان لوگوں کی موجودگی میں سیاست اور جمہوریت ترقی نہیں کرسکتی ۔مغربی استعمار نے جرنیلوں سے ساز باز کرکے مصر ،الجزائر اور فلسطین میں عوام کی منتخب جمہوری حکومتوں کا تختہ الٹا ہے۔انہوں نے کہا کہ پارٹیاں خاندانی پراپرٹی بن چکی ہیں جو باپ کے بعد بیٹے اور اگر بیٹا نہ ہوتو بیٹی کو منتقل کردی جاتی ہیں مگر غریب سیاسی ورکروں اور کارکنوں کو نعرے لگانے اور جھنڈے اٹھا نے کے سوا کچھ نہیں ملتا۔ جمہوریت کے پہاڑے پڑھنے والی جماعتوں میں دور دور تک جمہوریت کا نام و نشان نہیں ،اسلئے میں نے الیکشن کمیشن سے درخواست کی ہے کہ سیاسی جماعتوں کے اندر شفاف انتخابات کیلئے موثر اقدامات کئے جائیں ۔انہوں نے کہا کہ جاگیرداروں اور سرمایہ داروں نے سیاست کو گھر کی لونڈی بنانے کیلئے پارٹیوں کو یرغمال بنا رکھا ہے ۔ سراج الحق نے کہا کہ ہمارا تعلیمی نظام معاشرے کو طبقاتی بنیادوں پر تقسیم کررہا ہے۔ جماعت اسلامی اقتدار میں آکر ملک میں یکساں نظام تعلیم رائج کرے گی جس میں غریب کے بچے کو بھی آگے بڑھنے کیلئے وہی سہولیات میسر ہونگی جو کسی وزیر مشیر صدر یا وزیر اعظم کے بچے کو ملتی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ غریب سرکاری ہسپتال سے ڈسپرین کی ایک گولی نہیں ملتی اور غریب عوام کا نمائندہ ایک دانت کے علاج کیلئے بیرون ملک جاکر 35لاکھ روپے خرچ کردیتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اقتدار میں آکر وزیر و ں مشیروں کے بیرون ملک علاج پر پابندی لگادے گی اور پانچ بڑی بیماریوں کا سرکاری ہسپتالوں میں مفت علاج ہوگا تاکہ غریبوں کو بھی علاج کی وہی سہولت ملے جو امیر وں کو حاصل ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک سے غربت کے خاتمہ کیلئے مہنگائی پر قابو پانا ضروری ہے ۔جماعت اسلامی اقتدار میں آکر تیس ہزار سے کم آمدنی والے شہریوں کو آٹا دال چائے چینی اور چاول کی قیمتوں پر سبسڈی دے گی تاکہ کوئی غریب بھوکا سوئے نہ خود کشی پر مجبو ر ہو۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s