سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کے حوالہ سے پوری قوم نوازشریف اور راحیل شریف کی طرف دیکھ رہی ہے۔سراج الحق

سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کے حوالہ سے پوری قوم نوازشریف اور راحیل شریف کی طرف دیکھ رہی ہے ،سانحہ میں 259مزدوروں کے زندہ جلائے جانے کے واقعہ کو سیاست کی نذر کیا گیا تو کوئی بھی حکمرانوں کے دہشت گردی کے خاتمہ کے نعروں پریقین نہیں کرے گا۔جے آئی ٹی رپورٹ کو فائلوں کی نذر کیا گیا تومزدوروں اور مظلوموں کی حق تلفی اور حوصلہ شکنی ہوگی ۔ سراج الحق

pic
لاہور16فروری 2015 ئ
    امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ سانحہ بلدیہ ٹاﺅن کے حوالہ سے پوری قوم نوازشریف اور راحیل شریف کی طرف دیکھ رہی ہے ،سانحہ میں 259مزدوروں کے زندہ جلائے جانے کے واقعہ کو سیاست کی نذر کیا گیا تو کوئی بھی حکمرانوں کے دہشت گردی کے خاتمہ کے نعروں پریقین نہیں کرے گا۔جے آئی ٹی رپورٹ کو فائلوں کی نذر کیا گیا تومزدوروں اور مظلوموں کی حق تلفی اور حوصلہ شکنی ہوگی ۔سندھ حکومت اور وفاق مزدور خاندانوں کو انصاف مہیا کریں ۔یہ کیس حکومت کیلئے ٹیسٹ کیس بن چکا ہے ، جے آئی ٹی رپورٹ کئی سرکاری اداروں کی مشترکہ تحقیق ہے جس میں ایم کیو ایم کو اس واقعہ کاصراحتاً ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے ، اب حکومت کا امتحان ہے کہ کیا وہ مزدوروں کو زندہ جلانے کو دہشت گردی قرار دیتی ہے یا نہیں ،متاثرہ خاندانوں کو انصاف نہ ملا تو ملک بھر کے مزدور اور عوام کا حکومت پر اعتماد اٹھ جائے گا۔پیپلز پارٹی محض سینیٹ الیکشن میں ووٹ لینے کیلئے ایم کیو ایم کوساتھ ملاتی ہے تو اس کا مطلب ہوگا کہ دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے وہ سنجیدہ نہیں ۔دہشت گردوں کو ساتھ بٹھا کر دہشتگردی پر قابو نہیں پایا جا سکتا ۔جرم کرنے والا سیاسی ہو یا غیر سیاسی اسے انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جانا چاہئے ،حکومت اور تحریک انصاف نے ہماری تجاویز کو قبول کیا تو دونوں کے درمیان مذاکرات کامیاب ہونگے اورہم دونوں کے درمیان پل کا کردار جاری رکھیں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں جاری مرکزی تربیت گاہ کے شرکا ئ،جماعت اسلامی کی برادرتنظیمات کے ذمہ داران اور شوکت خانم ہسپتال میںزیر علان کسان بورڈ پنجاب کے سیکرٹری جنرل ارسلان خان خاکوانی کی عیادت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔
    سراج الحق نے کہا کہ سانحہ بلدیہ ٹاﺅن بھی سانحہ پشاور کی طرح دہشت گردی کا بدترین واقعہ ہے جس نے پوری قوم کو ہلا کر رکھ دیا ہے ۔ہم نہیں چاہتے کہ کسی کے ساتھ امتیازی سلوک ہو،پوری قوم ملک میں امن چاہتی ہے ،یہ امن اسی وقت قائم ہوسکتا ہے کہ اس میں بااثر اور بے اثر کی تمیز نہ کی جائے۔کراچی میں دہشت گردی کے یہ واقعات تسلسل سے جاری ہیں جن میں اب تک 24ہزار لوگوںکو شہید کیا جاچکا ہے ،وکلاءکو جلایا گیا ہے ،ڈاکٹروں کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا ۔بچوں اور عورتوں کو بھی نہیں بخشا گیا۔
    سراج الحق نے کہا کہ ملک میں استحصالی اور طبقاتی نظام حکومتی سرپرستی میں جاری ہے ،غریب اور امیر کیلئے علیحدہ علیحدہ قانون ہیں ،امیر اشارہ توڑتا ہے تو اسے سیلوٹ کیا جاتا ہے اور غریب کا چلان کردیا جاتا ہے ،امراءکے بچے عالی شان بنگلوں میں شہزادوں کی زندگی گزارتے ہیں اور غریب کے بچے ہوٹلوں میں برتن دھونے اور ورکشاپوں میں کام کرنے پر مجبور ہیں ،انہوں نے کہاکہ ہم ایسے ظالمانہ نظام کو مزید برداشت نہیں کرسکتے ،انہوں نے کہا کہ میں ایسا پاکستان چاہتا ہوں جہاں غریب بھی خوشحال ہو ،غریبوں کے بچوں کو تعلیم ،صحت اور روز گار کے یکساں مواقع ملیں ،جس پاکستان میں لاکھوں غریب بھوکے سوتے ہوں،بیماروں کو علاج نہ ملے اور اگر کوئی انصاف لینا چاہئے تو اسے مفت انصاف نہ ملے ایسا پاکستان بدامنی کی آماجگاہ نہیں بنے گا تو اور کیا ہوگا،پاکستان صرف نظام شریعت اور خلافت کے نفاذ سے ہی ایک فلاحی ریاست بن سکتا ہے ،انہوں نے کہا کہ اسلامی پاکستان ہی خوشحالی ،امن و آشتی اور اتحاد و وحدت کی ضمانت دے سکتا ہے ،انہوں نے کہا کہ ہم کرپشن کے نظام کو جڑ سے اکھاڑ پھینکیں گے اور سالانہ ہونے والی 15سو ارب کی کرپشن روک کر یہ اربوں روپیہ عوام کو تعلیم اور صحت کی سہولتیں مہیا کرنے پر خرچ کریں گے ، عوام اب سانپوں کو دودھ پلانا چھوڑ کر ان کی کھوپڑیوں کو مسلنے میں ہمارا ساتھ دیں ،انہوں نے کہا کہ ہمارا ہدف ہے کہ مزدور کو کارخانہ دار ،کسان اور کاشتکار کو جاگیردار اور غریب کو ظالم وڈیروں کے برابر کھڑا کریں ۔ہم بندوق اور توپ سے نہیں انشاءاللہ عوام کی قوت سے ملک میں اسلامی انقلاب برپا کریں گے اور یہ وقت اب زیادہ دورنہیں ،مجھے اسلامی انقلاب کا اسی طرح یقین ہے جس طرح کل کا سورج طلوع ہونے کا یقین ہے ۔ 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s