حسینہ واجد حکومت سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے۔ سراج الحق

سراج الحق کی طرف سے بنگلہ دیش میں مولانا عبدالسبحان کو سزائے موت سنانے کی مذمت
حسینہ واجد حکومت سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے۔ (سراج الحق )

IMG_1884

امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق بنگلہ دیش میں سابق رکن اسمبلی اور بزرگ سیاستدان مولانا عبدالسبحان کو بنگلہ دیش کی نام نہاد عدالت کی طرف سے سزائے موت سنائے جانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ حسینہ واجد حکومت سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے ۔ مولانا عبدالسبحان کا جرم یہ تھاکہ انہوں نے متحدہ پاکستان کی حمایت کی تھی ۔ نام نہاد عدالت کی طرف سے سزائے موت کا فیصلہ سراسر انتقامی کاروائی ہے ۔ سراج الحق نے کہاکہ نام نہاد ٹریبونل اس سے پہلے بھی جماعت اسلامی کے کئی محب وطن لوگوں کو سزائے موت سنا چکاہے ۔ پروفیسر غلام اعظم نے 90 سال کی عمر میں جیل ہی میں اپنی جان دے دی ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کی تنظیموں نے اس ظلم کے خلاف کوئی آواز بلند نہیں کی اور نہ ہی بے حس مسلمان حکمرانوں نے سوائے ترکی، اس کا کوئی نوٹس لیا ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں سزائے موت کے قانون کو ختم کرنے کے لیے ایڑی چوٹی کا زور لگانے والے مغربی ممالک نے بنگلہ دیش میں جماعت اسلامی کے معمر لوگوں کو تختہ دار پر لٹکائے جانے کے خلاف لب سی لیے ہیں اور حکومت پاکستان نے بھی اسے بنگلہ دیش کا اندرونی معاملہ قرار دے کر مجرمانہ خاموشی اختیار کر رکھی ہے حالانکہ بھٹو ، مجیب اور اندرا گاندھی کے درمیان معاہدہ طے پایا تھاکہ کسی کے خلاف انتقامی کاروائی نہیں کی جائے گی ۔ سراج الحق نے کہاکہ معروف عالم دین کو سزائے موت ،انصاف کا قتل اور انسانیت کی توہین ہے ۔حسینہ حکومت کی انتقامی کاروائیوں سے بنگلہ دیش جمہوریت کی پٹڑی سے اتر سکتا ہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s