امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا اسلام آباد میں اجتماع ارکان سے خطاب اور پشاور ایم پی ایز ہاسٹل میں اراکین اسمبلی سے گفتگو

سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے رجحان اور دولت کے استعمال کے خلاف ایک نفرت نے جنم لیا ہے جو ملک میں انتخابی نظام کی بہتری کیلئے انتہائی خوش آئند ہے ، ملک میں شفاف انتخابات کیلئے قومی سوچ میں یہ تبدیلی عوامی شعور کا ثبوت ہے ،اگر تمام جماعتیں الیکشن میں منفی ہتھکنڈوں ،دولت کے بے دریغ استعمال اور ہر قسم کی دھاندلی کے خاتمہ پر متفق ہوجائیں تو ملک میں حقیقی جمہوریت کو پنپتے دیر نہیں لگی گی ۔پشاور شہر کو ایک ماڈل شہر اور کلین اور گرین بنانے کیلئے اجتماعی جدوجہد کی ضرورت ہے۔امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا اسلام آباد میں اجتماع ارکان سے خطاب اور پشاور ایم پی ایز ہاسٹل میں اراکین اسمبلی سے گفتگو 

Siraj ul Haq Pic

پشاور1 مارچ2015ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے رجحان اور دولت کے استعمال کے خلاف ایک نفرت نے جنم لیا ہے جو ملک میں انتخابی نظام کی بہتری کیلئے انتہائی خوش آئند ہے ، ملک میں شفاف انتخابات کیلئے قومی سوچ میں یہ تبدیلی عوامی شعور کا ثبوت ہے ،اگر تمام جماعتیں الیکشن میں منفی ہتھکنڈوں ،دولت کے بے دریغ استعمال اور ہر قسم کی دھاندلی کے خاتمہ پر متفق ہوجائیں تو ملک میں حقیقی جمہوریت کو پنپتے دیر نہیں لگی گی ۔گزشتہ 67سالوں سے ملک میں جمہوریت کے نام پر آمریت مسلط رہی جس نے پاکستان کو بحرانوں کا شکار کیا اور عوام اپنے بنیادی حقوق سے محروم رہے ،شخصی اور فوجی آمریتوں نے عوام کا حق حکمرانی غصب کیا ۔ جماعت اسلامی کے مرکزی میڈیا سیل کے مطابق ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں اجتماع ارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر جماعت اسلامی کے سیکر ٹری جنرل لیاقت بلو چ ،امیر جماعت اسلامی صو بہ پنجاب ڈا کٹر وسیم اختر ،امیر جماعت اسلامی اسلام آباد زبیر فاروق خان اورخالدفارو ق نے بھی خطاب کیا جبکہ نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان میاں محمد اسلم ،مو لانا جلیل نقشبندی اورنذیر احمد جنجوعہ بھی مو جو د تھے ۔سراج الحق نے کہا جماعت اسلامی کے کار کنان کو اپنے ارد گرد امر بالمعروف اور نہی المنکر کا کام کر نا چا ہیے یہ شیر دل اور پُر عزم لو گو ں کا کام ہے جبکہ ہماری اصل میراث اور سر مایہ قرآن کر یم ،حدیث نبوی ،جماعت اسلامی کی دعوت اور یہ انقلابی تحریک ہے ہمیں اپنی اولا دوں کو بھی اس پیغمبرانہ جہدوجہد کے لیے تیار کر نا چاہیے ۔انھوں نے کہاہمیں اپنی کمزوریوں پر قابو پاکرعوام الناس تک اپنے پیغام کو پورے اعتماد کے ساتھ پہنچانے کی کوشش کرنی چاہئے، نبی مہربان حضرت محمد ﷺ سے محبت کا تقاضا ہے کہ ہم انسانیت کی فلاح پر مبنی آپﷺ کے لائے ہوئے نظام کو دنیا پر غالب کردیں ،انہو ں نے کہا کہ وہ وقت اب زیادہ دور نہیں جب پاکستان میں اسلامی انقلاب کا سورج طلوع ہوگا،انہوں نے کہا ارکان اور کار کنان کو دعوت کا آغا ز اپنے گھراور اہل خا نہ سے شرو ع کر نا چا ہیے۔سراج الحق نے کہا دنیا بھر کی اسلامی تحریکیں جماعت اسلامی کو تو انا اور مضبو ط دیکھنا چاہتی ہیں ۔اجتماع ارکان سے خطاب کر تے ہوئے امیر جماعت اسلامی صو بہ پنجاب ڈاکٹر وسیم اختر نے کہا ہمیں ون پلس ون کے فارمولے کے تحت رابطہ عوام کے ذریعے بڑی تعداد میں ارکان اور کار کنا ن کی تعداد میں اضا فہ کر نا ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ ملک پر مسلط انگریزوں کا پروردہ استحصالی طبقہ پاکستان کو ایک اسلامی اور خوشحال پاکستان بننے کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے ۔دریں اثناء خیبر پختونخواکے ایم پی ایز ہاسٹل میں صوبائی سینئر وزیر عنایت اللہ خان ،وزیر اوقاف حاجی حبیب الرحمان ،وزیر خزانہ مظفر سید کے ہمراہ خیبر پختونخوا کے اراکین اسمبلی کے مختلف وفود سے بات چیت کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ پشاور شہر کو ایک ماڈل شہر اور کلین اور گرین بنانے کیلئے اجتماعی جدوجہد کی ضرورت ہے ،پشاور جو امن محبت اور مہمان نوازی اور پھولوں کے شہر کے نام سے مشہور تھا تین عشروں سے پاکستان کی ناکام پالیسیوں کی وجہ سے بدامنی کا شکار ہے اب پشاور کی عظمت رفتہ ،اور شہریوں کی خوشیوں کو بحال کرنا صوبائی حکومت کی اولین ذمہ داری ہے ،وزیر اعلیٰ کی سرکردگی اور نگرانی میں صوبائی حکومت کامیابی کے ساتھ منزل کی طرف بڑھ رہی ہے ۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے صوبائی وزیر بلدیات و سینئر وزیر عنایت اللہ خان کو ہدایت کی وہ پشاور کے مفتی محمود اورفلائی سمیت دیگر میگا پراجیکٹ پر توجہ دیکر جلد از جلد مکمل کرلیں انہوں نے پشاور شہر کی سڑکوں کو کشادہ کرنے اور شاہراہوں کو خوبصورت بنانے پر صوبائی حکومت اور خاص طور پر صوبائی وزیر بلدیات عنایت اللہ خان کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ پشاور کو صاف اور سرسبز شہر بنانا صوبائی حکومت اور شہریوں کی اجتماعی ذمہ داری ہے انہوں نے کہا کہ کرپشن اور کمیشن خوری کے خلاف مہم کو نتیجہ خیز بنایا جائے انہوں نے کہا کہ منتخب ممبران کی کامیابی میریٹ کی بالادستی میں ہے انہوں نے کہا کہ شہریوں کو صاف پانی ،ہسپتالوں میں علاج کی سہولیات کی فراہمی شہریوں کا مطالبہ ہے اسلئے میگا پراجیکٹ کے ساتھ ساتھ عوام کی بنیادی ضرورتوں پر بھی توجہ دی جائے۔انہوں نے کہاکہ مخلوط حکومت اور شہریوں کی اجتماعی جدوجہد کے نتیجے میں پشاور کو پاکستان کا استنبول بنایا جائیگا اور اسی جدوجہد کے آثار اب پشاور کے شاہراہوں پر نظر آنا شروع ہوچکے ہیں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s