پاک چائنا اکنامک کوریڈور ملکی ترقی کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے اور یہ کسی فرد یا کسی کے انا کا مسئلہ نہیں یہ ملک و قوم کے مستقبل کا سوال ہے ،حکومت اس مسئلے کو سنجیدگی سے لے ،مرکزی سرکار ہمیں اندھیرے میں نہ رکھے ،کاشغر گوادر روٹ کیلئے نزدیک ترین راستہ گلگت چترال اور ملاکنڈ ڈویژن ہے لہٰذا اس اہم فیصلے کو میریٹ کی بنیاد پر حل کرے تاکہ اس پر پوری قوم متفق ہوسکے ،حکمرانوں کی انا ملک و قوم کے مستقبل کے اس اہم منصوبے کو بھی ایک اور کالاباغ ڈیم جیسے منصوبے کی نظر کرتا نظر آرہا ہے۔۔سینیٹر سراج الحق کا جندول میں انتخابی جلسہ عام سے خطاب

5

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ پاک چائنا اکنامک کوریڈور ملکی ترقی کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے اور یہ کسی فرد یا کسی کے انا کا مسئلہ نہیں یہ ملک و قوم کے مستقبل کا سوال ہے ،حکومت اس مسئلے کو سنجیدگی سے لے ،مرکزی سرکار ہمیں اندھیرے میں نہ رکھے ،کاشغر گوادر روٹ کیلئے نزدیک ترین راستہ گلگت چترال اور ملاکنڈ ڈویژن ہے لہٰذا اس اہم فیصلے کو میریٹ کی بنیاد پر حل کرے تاکہ اس پر پوری قوم متفق ہوسکے ،حکمرانوں کی انا ملک و قوم کے مستقبل کے اس اہم منصوبے کو بھی ایک اور کالاباغ ڈیم جیسے منصوبے کی نظر کرتا نظر آرہا ہے اگر وسائل کی منصفانہ تقسیم کی جائے تو یہاں نہ غربت رہیگی نہ بدامنی، مسائل کی جڑ وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم اور میریٹ کی پامالی ہے ،مرکزی سرکار نے کبھی بھی خیبر پختونخوا کے ساتھ انصاف نہیں کیا مرکزی سرکار نے اگر بجلی کے خالص منافع کی مد میں بقایا 375 بلین روپے واپس کر دئے تو خیبرپختونخوا کی تقدیر بدل جائیگی ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے 95 کے ضمنی انتخابات کے سلسلے میں منعقدہ جندول میں ایک بڑے عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا پروفیسر محمد ابراہیم خان ،جنرل سیکرٹری خیبرپختونخوا شبیراحمد خان،پی کے 95سے جماعت اسلامی کے نامزد امیدوار اعزازالملک افکاری ،نائب امیرجماعت اسلامی خیبرپختونخوا مولانا اسد اللہ ،تحریک انصاف ملاکنڈ ڈویژن کے سابق صدر اور موجودہ صدر سعودی عرب ریاض فضل اللہ خیام ،ممبر قومی اسمبلی صاحبزادہ محمد یعقوب خان و دیگر نے بھی خطاب کیا اس موقع پر علاقہ جندول کے معروف شخصیت اکرام اللہ ایڈوکیٹ نے اپنے پورے خاندان اور سینکڑوں ساتھیوں سمیت عوامی نیشنل پارٹی سے مستغفی ہوکر جماعت اسلامی میں شمولیت کا اعلان کیا امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکمرانوں کا سلوک شروع سے خیبر پختونخوا کے ساتھ سوتیلانہ ہے مرکزی حکمرانوں نے ہمیشہ صوبہ خیبر پختونخوا کو نظر انداز کیااورصوبے کے وسائل کو یرغمال بنایا ،سراج الحق نے کہا کہ معلوم نہیں ہمارے حکمران اپنے وسائل سے استفادہ کیو ں نہیں کرتے ہمارے حکمرانوں نے ہوا سے بجلی بنانے کیلئے چین سے معاہدہ کیا ہے اور بھاری مشنریوں کے ذرئعے مہنگی بجلی پیدا کریں گے لیکن میں میں حکمرانوں سے پوچھنا چاہتا ہوں کہ جب ہمارے پاس خیبرپختونخوا میں پنجکوڑہ ۔دریائے سوات،سندھ جیسے وسائل ہیں اور اس سے ایک روپے فی یونٹ بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور کم خرچ منصوبوں جن کو جلد از جلد پایہ تکمیل تک بھی پہنچانے کی فزیبلٹی رپورٹ موجود ہے ان منصوبوں سے 30 ہزارمیگاواٹ بجلی پیدا کرکے پورے ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا جاسکتا ہے لیکن اتنے مہنگے منصوبے جسکے پائیہ تکمیل تک پہنچنے کے امکانات بھی نہیں ہیں کیوں شروع کئے جارہے یہ پیغام ہے کہ مرکزی سرکار صوبہ خیبر پختونخوا سے مخلص نہیں ہے،خیبرپختونخوا سے سوتیلے ماں جیسے سلوک اور ہمارے اصل مسائل سے چشم پوشی اختیار کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ جب یہاں 30ہزار میگاواٹ کی سستی ترین بجلی پیدا کرنا انتہائی معمولی بات ہے تو پھر ہمارے حکمرانوں کو بھی ہوش کے ناخن لیکر میریٹ پر فیصلے کرتے ہوئے اس علاقے میں وہ ہیوی مشینریاں اور کارخانے نصب کرنے چاہئے کیونکہ یہاں افرادی قوت بھی ہے اور وسائل و صلاحیت بھی ہے اور اس علاقے نے بڑے درد سہے ہیں بڑے نقصانات اٹھائے ہیں اس لئے ہم سمجھتے ہیں کہ چائینا اکنامک کوریڈور سمیت بجلی پیدوار کے ان منصوبوں میں سب سے پہلا حق میریٹ کی بنیا د اسی علاقے ملاکنڈ ڈویژن کا بنتا ہے تاکہ خیبرپختونخوا کی احساس محرومی ختم ہوسکے ۔سینیٹرسراج الحق نے کہاکہ بھارت پاک چائنا دوستی اور باہمی تعاون کو بڑھتا اور پھلتا پھولتا دیکھ کر سخت پریشانی میں مبتلا ہے اورپاکستان اور چین کے درمیان 46ارب ڈالر کے معاہدے طے پانے کے بعد سے اس نے اپنی سازشوں کا دائرہ مزید بڑھا دیا ہے بھارت نے پاکستان کے استحکام اور ترقی کے منصوبوں کو متنازع بنانے کیلئے اپنے ایجنٹوں کو متحرک کردیا ہے ،بھارت پاکستان کا ازلی دشمن ہے اور وہ کسی قیمت پر پاکستان کو علاقے میں اپنے برابر کھڑا ہوتے نہیں دیکھ سکتا ۔انہوں نے کہا کہ بھارت پاک چین دوستی کو ہضم نہیں کرپا رہا ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو اس سلسلہ میں فوری طور ایک وسیع تر قومی مشاورت کے ذریعے عوام کے اندر بڑھتے ہوئے شکوک و شبہات کو ختم کرنا چاہئے اور قومی اتفاق رائے سے اس منصوبے کو عملی جامہ پہنا ناچاہئے ۔سراج الحق نے کہا کہ ہم ملک میں آئین و قانون اور میرٹ کی بالادستی کی جدوجہد کررہے ہیں ،پاکستان کے حالات کسی فرد یا پارٹی کی حکمرانی سے نہیں بلکہ ملک میں قرآن و سنت کے نظام کے نفاذ سے بدلیں گے ۔انہوں نے کہا کہ ملکی اقتدار پر مسلط رہنے والوں نے عوامی مشکلات اور مسائل میں اضافہ کرنے کے سوا کچھ نہیں کیا ۔انہوں نے کہا کہ 68سال سے ملک پر ایک ہی طبقہ اشرافیہ حکمران ہے ،حکمران طبقہ عوام کو کیڑے مکوڑوں سے زیادہ اہمیت نہیں دیتا،غریب کو روٹی ،کپڑے اور چھت سے محروم رکھنے کا ذمہ دار یہی طبقہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ اسلام آبادمیں بیٹھے ہوئے اندھے گونگے اور بہرے حکمرانوں پر غربت اور تنگ دستی کے مارے عوام کی سسکیوں اور چیخوں کا کوئی اثر نہیں ہورہا ۔عوام کا کام صرف ٹیکس اور ووٹ دینا رہ گیا ہے ۔غربت مہنگائی ،بے روزگاری اور بدامنی نے عوام کی زندگی اجیرن بنا دی ہے ،سراج الحق نے کہا کہ جماعت اسلامی اس ظالمانہ نظام کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے اور عام آدمی کو تعلیم ،صحت اور روز گار کی سہولتیں دلوانے کیلئے میدان میں آئی ہے ۔انہوں نے اس امیدکا اظہار کیا کہ حلقہ پی کے 95 کے عوام 7مئی کو ترازو پر مہر لگا کر جماعت اسلامی پر اپنے بھرپور اعتماد کا اظہار کریں گے ۔سراج الحق نے کہا کہ جب تک عوام خود اس ظالم اشرافیہ کے خلاف نہیں اٹھیں گے اور ان سانپوں اور بچھوؤں کو دودھ پلاتے رہیں گے یہ ظلم وجبر کا نظام ختم نہیں ہوگا اس لئے عوام اپنا انتخابی رویہ بدلیں اوراپنی امانتیں ایسے لوگوں کے سپرد کریں جو پوری دیانتداری سے ان کی حفاظت کریں اور عوام کی خدمت کو عبادت سمجھتے ہوئے اللہ اور عوام کے سامنے جواب دہی کا احساس رکھتے ہوں ،انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کے سینکڑوں لوگ بلدیاتی اداروں ،قومی و صوبائی حکومتوں اور سینیٹ کے ممبر رہے مگر آج تک کوئی ان کے دامن پر کرپشن ،کمیشن کا ایک داغ تلاش نہیں کرسکا۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s