حکومت پاکستان خطے کے امن کیلئے افغان طالبان اورافغان صدر ڈاکٹر اشرف غنی کے درمیان مذاکرات کو کامیاب بنانے کیلئے اپنا بھر پور کردار ادا کرے تاکہ افغانستان سمیت پاکستان اور خطے میں استحکام آسکے ۔امریکا اور اس کے ایجنٹ عالم اسلام میں خانہ جنگی چاہتے ہیں اور انہو ں نے یمن ،افغانستان ،عراق میں مسلمانوں کو بہت نقصان پہنچایا ہے ۔پاکستان کے عوام سعودی عرب اور حرمین شریفین کے تحفظ کیلئے ہر قسم کی قربانی کیلئے تیارہ ہیں ۔ملک لوٹنے والوں کے احتساب کا وقت آگیا ہے ۔امیرجماعت اسلامی سینیٹرسراج الحق کا دیربالا میں جلسہ عام سے خطاب

s1

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ خطے کے امن کیلئے افغان طالبان اورافغان صدر ڈاکٹر اشرف غنی کے درمیان مذاکرات کو کامیاب بنانے کیلئے اپنا بھر پور کردار ادا کرے تاکہ افغانستان سمیت پاکستان اور خطے میں استحکام آسکے ۔امریکا اور اس کے ایجنٹ عالم اسلام میں خانہ جنگی چاہتے ہیں اور انہو ں نے یمن ،افغانستان ،عراق میں مسلمانوں کو بہت نقصان پہنچایا ہے ۔پاکستان کے عوام سعودی عرب اور حرمین شریفین کے تحفظ کیلئے ہر قسم کی قربانی کیلئے تیارہ ہیں ۔ملک لوٹنے والوں کے احتساب کا وقت آگیا ہے ۔پاکستانی عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دے ہم ملک کو قرضوں اور بیروزگاری سے نجات دلادیں گے ۔لواری ٹنل سے مسئلہ کشمیر بنا دیا ہے اور دس سالوں سے دیر بالا اور چترال کے عوام کو ذہنی مریض بنا دیاگیا ہے ۔کاشغر کوریڈور بنایا جارہا ہے لیکن اس کا آسان ترین اور محفوظ ترین راستہ یعنی خنجراب گلگت ،چترال دیر سے حسن ابدال تک ہے اور حکومت سے اپیل ہے کہ اس راستے کے ذریعے ہی کوریڈور بنایا جائے ۔وہ اتوار کے روز ضلع دیر بالا کے ہیڈ کوارٹر میں شباب ملی ضلع دیر بالا کے تحت منعقدہ ہزاروں افراد کے کنونشن سے خطاب کررہے تھے ۔کنونشن سے سینئر وزیربلدیات عنایت اللہ خان ،جماعت اسلامی کے قومی اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر صاحبزادہ طارق اللہ ،ایم پی اے محمد علی ،ایم پی اے ملک بہرام ،صوبائی نائب صدر مولانا اسد اللہ ،ضلعی امیر صاحبزادہ صفی اللہ اور شباب ملی کے ضلعی صدر رفیع اللہ نے بھی خطاب کیا ۔امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا کہ پاکستان کے بازاروں او ر کوچوں میں کاغذات چننے پر ہمارے بچوں کو کس نے مجبور کیا ان کو مجبور کرنے والے ہی سیاستدان ہیں ۔ہمارے بچے ہوٹلوں پر چائے فروخت کرتے ہیں ،ٹائر کے پنکچر لگا رہے ہیں جبکہ ان کے بچے دنیا کے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کر رہے ہیں ۔دنیا کے لوگ چاند اور ستاروں پر ریسرچ کر رہے ہیں جبکہ پاکستانی بچے سیاستدانوں کی وجہ سے ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کے مقروض ہیں ۔سیاستدانوں کے گھوڑے مربے کھا رہے ہیں جبکہ ہمارے بچوں کے پاس قلم کتاب تک نہیں ہے ۔اس ملک میں سب کچھ ہے لیکن دیانتدارقیادت نہیں ہے ۔دیانتدار قیادت کیلئے جماعت اسلامی کا ساتھ دیں ۔ملک میں سیاست کے لات و منات کے بتوں کو توڑنے کا وقت آگیا ہے اس ملک کے وسائل لوٹنے کے ساتھ ساتھ کرپٹ سیاستدانوں نے ڈاکٹر عافیہ اور رمز یوسف کو بھی فروخت کر دیا ۔ملک کے کرپٹ سیاستدان مشکل میں باہر چلے جاتے ہیں اور جب انتخاب کا وقت آتا ہے تو ملک کو لوٹنے کیلئے واپس آجاتے ہیں ۔ان کو ووٹ دینا سانپوں کو پالنے کے مترادف ہے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اگر اقتدار میں آگئی تو پانچ بیماریوں ہیپاٹائٹس سی،کینسر ،دل ،گردوں اور تھیلی سیمیا کے مریضوں کا مفت علاج کریں گے جبکہ تین ہزار سے کم آمدنی والوں کیلئے آٹا،گھی ،چاول ،دال اور چینی سستے ریٹ پر مہیاکریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا اصل مقابلہ امریکہ کے ایجنٹوں کے ساتھ ہے جو اس ملک میں امریکی مفادات کیلئے کام کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہم سعودی عرب کو یقین دہانی کراتے ہیں کہ پاکستانی عوام سعودی عرب کے تحقط کیلئے ہر مشکل میں اس کے ساتھ کھڑے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جندول کے لوگوں نے پی کے 95کے ضمنی انتخاب میں نہ صرف جماعت اسلامی کو کامیاب کرایا بلکہ سہ فریقی اتحاد کو شکست دی ۔اب یہ پروپیگنڈا کیاجارہا ہے کہ خواتین نے ووٹ نہیں ڈالا ۔خواتین کو کس نے روکا یہ کوئی بھی نہیں بتاتاہے لیکن ہم دعوے کے ساتھ کہتے ہیں کہ خواتین کے ووٹ میں بھی ہم جیتیں گے کیونکہ اس ملک کی کروڑوں مائیں ،بیٹیاں اور بہنیں جماعت اسلامی کے ساتھ ہیں ۔انہوں نے دیرکے عوام سے اپیل کی کہ تیس مئی کے بلدیاتی انتخابات میں جماعت اسلامی کا ساتھ دیں تاکہ ہم لوگوں کے مسائل حل کرنے کے اپنے ایجنڈے پر عمل
کریں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s