ذلت آمیز شرائط اور سود پر قرضے حاصل کرکے بغلیں بجانے سے معیشت بہتر نہیں ہوگی ،معیشت کی بہتری کیلئے آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک سے نجات حاصل کرکے خود انحصاری کی طرف بڑھنا ہوگا۔ پاکستان کو حاصل کرنے والوں نے اسے ایک مسجد بنایا تھا جسے آج تک کوئی امام نہیں ملا۔ سینیٹر سراج الحق

pic jip meeting

لاہور15مئی2015ء
     امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ ذلت آمیز شرائط اور سود پر قرضے حاصل کرکے بغلیں بجانے سے معیشت بہتر نہیں ہوگی ،معیشت کی بہتری کیلئے آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک سے نجات حاصل کرکے خود انحصاری کی طرف بڑھنا ہوگا۔ پاکستان کو حاصل کرنے والوں نے اسے ایک مسجد بنایا تھا جسے آج تک کوئی امام نہیں ملا۔ گزشتہ 68سال سے اس مسجد پر فنکاروں اور اداکاروں کا قبضہ ہے ۔ملک و قوم اپنی منزل کھو بیٹھے ہیں ،حکومت کیا چاہتی ہے کسی کو کچھ معلوم نہیں ۔سیاست پر مغربی جمہوریت ،معیشت پر سود اور تعلیم پر لارڈ میکالے کا قبضہ ہے ۔آئین میںریاست کا سرکاری مذہب اسلام اور اللہ کو حاکم اعلیٰ تسلیم کرنے کے بعد حکمران من مرضی کررہے ہیں اور اغیار کے ہاتھوں میں کھلونا بنے ہوئے ہیں۔عوام کا کام ٹیکس اور بل دینا رہ گیا ہے ۔پی کے 95میں خواتین کے ووٹ کاسٹ نہ کرنے کا الزام جماعت اسلامی پر لگانے والے بتائیں کہ 2008کے الیکشن میں خواتین کو ووٹ ڈالنے سے کس نے روکا تھا۔جماعت اسلامی نے 2008کے انتخابات کا بائیکاٹ کیا تھا جبکہ پیپلز پارٹی ،اے این پی اور مسلم لیگ سمیت دیگر پارٹیوں نے انتخابات میں بھرپور حصہ لیا تھا۔جماعت اسلامی کی خواتین قومی و صوبائی اسمبلی نے پی کے 95میں خواتین انتخاب کے لیے بڑے پیمانے پر الیکشن مہم چلائی تھی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد منصورہ میں جمعہ کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔منصورہ میں جاری مرکزی تربیت گاہ میں ملک بھر سے آئے ہوئے کارکنان بھی بڑی تعدا د میں جمعہ کے اجتماع میں شریک تھے ۔
    سینیٹرسراج الحق نے کہا کہ کراچی میں جاری قتل و غارت گری کی بڑی وجہ وفاقی و صوبائی حکومتوں اور سیاسی شخصیات کی طرف سے مجرموں کی مسلسل سرپرستی ہے ۔جن لوگوں کو جیلوں میں ہونا چاہئے تھا انہیں حکومتوں نے اپنے کندھوں پر اٹھائے رکھا۔انہوں نے کہا کہ اگر 12مئی ،8اپریل کے واقعات اور بلدیہ ٹاﺅن فیکٹری میں زندہ جلائے جانے والے 260مزدوروں کے قاتلوں کو پکڑا جاتا تو 13مئی کا سانحہ پیش نہ آتا ۔انہوں نے کہا کہ سینکڑوں سیکورٹی اہلکاروں سمیت 24ہزار سے زائد معصوم شہریوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا ہے ،شہر ویران اور قبرستان آباد ہورہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں نے اسماعیلی برادری کے بھائیوں اور بہنوں کو سروں اورسینوں میں گولیاں ماریں،سیکورٹی ادارے بتا رہے ہیں کہ قاتل ماہر نشانہ باز تھے اور ان کا مقصد ہی زیادہ سے زیادہ لوگوں کو قتل کرنا تھا ،انہوں نے کہا کہ بدترین دہشت گردی اور بدامنی کے باوجود حکمران خود کوئی قدم اٹھانے کی بجائے امریکہ کی طرف دیکھ رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں سرکاری محکموں خاص طور پرپولیس میں ہزاروں سیاسی بھرتیاں کی گئیںجس کی وجہ سے پولیس جرائم پر قابو پانے میں ناکام ہے۔،انہوں نے کہا کہ قوم دہشت گردی کے خلاف متحد ہے ، سیاسی جماعتیں وقت سے فائدہ اٹھائیں اور دہشت گردی اور بدامنی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کیلئے متحد ہوجائیں ۔
    سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ملک و قوم کو مسائل و مشکلات اور بحرانوں کے گرداب سے نکالنے کیلئے عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دیں ۔ جماعت اسلامی ملک میں نظام مصطفٰے کے نفاذ کیلئے کوشاں ہے ، انہوں نے کہا کہ جب تک دیانتدار اور عوام کے سامنے جواب دہی کا احساس رکھنے والی قیادت سامنے نہیں آتی ملکی مسائل حل نہیں ہونگے ،انہوں نے کہا کہ چوروں کے ہاتھوں چوری اور ظالموں کے ہاتھوں ظلم کا خاتمہ نہیں ہوسکتا ۔انہوں نے کہا کہ عوام کا رجحان تیز ی سے جماعت اسلامی کی طرف بڑھ رہا ہے ،بلدیاتی انتخابات میں جماعت اسلامی ایک بڑی عوامی قوت بن کر سامنے آئے گی ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ پنجاب اور سندھ حکومتیں بھی جلد از جلد بلدیاتی انتخابات کا اعلان کریں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s