حکمران اگر را کا ہاتھ نہیں توڑ سکتے تو پھرانکو حکمرانی کا کوئی حق نہیں ،بدامنی اور لاقانونیت اور مٹھی بھر اشرافیہ کی کرپشن نے عوام کو بدحال کردیا ہے اب عوام جاگ اٹھے ہیں اور اپنے حق چھیننے کیلئے جدوجہد کو تیار ہیں ،ہم اس ملک میں عوامی اور غریب راج قائم کریں گے اور مٹھی بھر اشرافیہ کے ساتھ 67سال کا احتساب کریں گے۔۔سراج الحق

00

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ حکمران اگر را کا ہاتھ نہیں توڑ سکتے تو پھرانکو حکمرانی کا کوئی حق نہیں ،بدامنی اور لاقانونیت اور مٹھی بھر اشرافیہ کی کرپشن نے عوام کو بدحال کردیا ہے اب عوام جاگ اٹھے ہیں اور اپنے حق چھیننے کیلئے جدوجہد کو تیار ہیں ،ہم اس ملک میں عوامی اور غریب راج قائم کریں گے اور مٹھی بھر اشرافیہ کے ساتھ 67سال کا احتساب کریں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے تخت بھائی میں منگل کے روز ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا جلسے سے امیر جماعت اسلامی خیبرپختون خوا پروفیسر محمد ابراہیم خان ،جنرل سیکرٹری جماعت اسلامی خیبر پختونخواشبیر احمد خان ،سابق وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن فضل ربانی ایڈوکیٹ امیر جماعت اسلامی مردان ڈاکٹر عطاؤالرحمان اور دیگر نے بھی خطاب کیا سراج الحق نے کہا کہ دنیا چاند پرپہنچ چکی ہے اور ہمارے بچے آج بھی گندگی کے ڈھیروں میں رزق تلاش کر رہے ہیں ٗ ڈگریاں کاغذ کے بے جان ٹکڑے بن گئے ہیں بڑے عہدے اور اعلیٰ مناصب پر خاص طبقہ قابض ہے اس نظام میں غریبوں کیلئے رونے کے سوا کچھ نہیں ہے انہوں نے کہا کہ بوسیدہ عدالتی نظام کے باعث یہاں انصاف بکتا ہے یہ نظام صرف سرمایہ داروں کیلئے ہے بینکوں نے آج تک کسی غریب کو قرضہ نہیں دیاغریب بدحال ہے اس نظام نے آج تک غریب عوام کو ایک زبان بھی نہیں دی انہوں نے کہا کہ ملک میں دہشت گردی اور بد امنی میں را ملوث ہے لیکن حکمران کھل کر را کا نام بھی لینے سے ڈرتے ہیں انہوں نے کہا کہ ہمیں اگر عوام نے موقع دیا تو ہم عوام کو ایسا نظام دینگے جہاں پر صدر پاکستان اور تخت بھائی بازار کے ایک چوکیدار کا بچہ ایک ہی سکول میں تعلیم حاصل کریں گے انہوں نے کہا کہ ملک کا کا آوے کا آوا ہی بگڑا ہوا ہے اور حکمرانوں اور مٹھی بھر اشرافیہ کے کتے پلاؤ کررہے ہیں اور ہمارے بچے کوڑا دانوں میں رزق تلاش کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ بدامنی لاقانونیت ،دہشت گردی،غربت ،مہنگائی اور بے روزگاری کا گردن مروڑنے کیلئے عوام کو اب اس مٹھی بھر اشرافیہ کا مثالی احتساب کرنا ہوگا انہوں نے کہا اب رنگ اور جھنڈے بدلنے والے سیاسی پنڈتوں کا دور گزر گیا اور عوام اب انکی آنے والی نسلوں کو بھی پہچان چکے ہیں اب عوام کو دھوکا نہیں دیا جاسکتا عوام اپنا راج قائم کرنے کیلئے اب جماعت اسلامی میں جوق درجوق شامل ہورہے ہیں انہوں نے کہا کہ کراچی میں روزانہ خونمیں روزانہ خون بہہ رہا ہے وہاں قبرستان آباد ہو رہے ہیں اب تک 24ہزار لوگ شہید ہو چکے ہیں لیکن آج تک کوئی مجرم نہیں پکڑا گیا کیا ان جرائم میں جنات ملوث ہیں ؟انہوں نے کہا کہ کہتے ہیں کہ بلوچی پاکستان کے خلاف ہیں ایسا ہرگز نہیں بلکہ بلوچی ظلم ٗ استحصال کے خلاف ہیں انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی ہی واحد جماعت ہے جو غریبوں کی حقیقی ترجمان ہے جو دھوکے ٗ فریب اور جھوٹ کی سیاست نہیں کرتی بلکہ نظام عدل کے لئے جدوجہد کر رہی ہے انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر بھی ہماری حکومتیں ناکام چکی ہیں کشمیری پاکستان سے محبت کرتے ہیں ڈھاکہ سے پاکستان سے محبت کرنے پر جماعت اسلامی کے رہنماؤں کے جنازے اٹھ رہے ہیں اس حوالے سے ہم نے وزیر خارجہ اوردیگر حکام سے بات کی لیکن سب سے مجرمانہ خاموشی اختیار کی ہوئی ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم آمروں کا ساتھ دینے کی بجائے مصری حکومت کے خلاف احتجاج کرے ہم محمد مرسی اور اخوان المسلمین کے ساتھ ہیں انہوں نے کہا کہ غریب عوام ساتھ دیں تو ہر ظالم کو انکے گریبان سے پکڑ کر انکے چوکٹ پر لائیں گے اور انہیں انصاف دلائینگے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s