جماعت اسلامی کی جدوجہدکا مقصدملک میں آئین اور جمہوریت کی بالاد ستی ہے ،ہم کسی پارٹی یا شخصیت کے نام کی نہیں دین کی بالادستی چاہتے ہیں اور ہماری یہ جدوجہد زندگی کی آخری سانس اور خون کے آخری قطرہ تک جاری رہے گی ۔سینیٹرسراج الحق

Siraj 16 2

لاہور16اگست 2015ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ طور خم سے سری نگر تک 14اگست کا منایا جانا قابل ستائش ہے ۔بھارت نے بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی اور میر واعظ کو اپنے گھروں میں نظر بند کیا مگر اس کے باوجود وہ کشمیری عوام کو پاکستان کا یوم آزادی منانے سے روک نہیں سکا ۔لاکھوں کشمیریوں نے پاکستان کے پرچموں کے ساتھ ریلیاں نکال کر بھارت کو بتا دیا ہے کہ وہ پاکستان کے ساتھ ہیں ۔ پاکستان ایک جغرافیے کے ساتھ نظریے اور منزل کا نام ہے جس کے لیے کشمیری قربانیاں دے رہے ہیں۔ ایم کیو ایم کے استعفوں کا مسئلہ سیاسی حکومت سے زیادہ اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ہے ۔ ایم کیو ایم کا ایک ہی مطالبہ ہے کہ کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن فورا روکا جائے ۔کراچی میں فوجی آپریشن کا مطالبہ خود الطاف حسین کا تھا۔رینجرز آپریشن سے کراچی میں جرائم میں کمی آئی ہے ۔ کراچی مسئلہ کا حل قانون کی حکمرانی ہے۔ بحرانوں سے عوام کی مشکلات میں اضافہ ہوتاہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی امیر شیخوپورہ رانا تحفہ دستگیر احمد کی قیادت میں ملنے والے وفداور امیر جماعت اسلامی ضلع کوئٹہ مولاناعبدالکبیرشاکرسے منصورہ میںملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔وفد میں غلام رسول بھٹی ، زاہد عمران کوروٹانہ و دیگر شامل تھے۔
سینیٹرسراج الحق نے کہا کہ لگتا ہے اسٹیبلشمنٹ نے ایم کیو ایم کے سر سے اپنی چھتری ہٹا لی ہے اور اب وہ خود کو تنہا محسوس کررہی ہے ، انہوں نے کہا کہ قومی و بین الاقوامی ادارے کراچی میں واضح تبدیلی کے اشارے دے رہے ہیں ،کراچی میں امن و امان کی صورت حال میں خاصی بہتری دیکھی جارہی ہے ،کراچی اور کوئٹہ میں ایک عرصہ کے بعد عوام نے یوم آزادی بھرپور طریقے سے منایا ہے اور کھل کر پاکستان سے اپنی حب الوطنی کا اظہار کیا ہے۔
سینیٹرسراج الحق نے کہا کہ جماعت اسلامی کی جدوجہدکا مقصدملک میں آئین اور جمہوریت کی بالاد ستی ہے ،ہم کسی پارٹی یا شخصیت کے نام کی نہیں دین کی بالادستی چاہتے ہیں اور ہماری یہ جدوجہد زندگی کی آخری سانس اور خون کے آخری قطرہ تک جاری رہے گی ۔انہوں نے کہا کہ انقلاب ڈنڈے اور بندوق کے زور پر نہیں لوگوں کے دل جیتنے سے آتے ہیں ۔ہم پاکستان کو ایک اسلامی فلاحی اور ڈیموکریٹک ریاست بنائیں گے ،انہوں نے کہا کہ حکمران عوام کیلئے ماں باپ کا درجہ رکھتے ہیں مگر جو حکمران اپنے بچوں کو ہی لوٹنا شروع کردے اور ان سے زندگی گزارنے کی بنیادی سہولتیں چھین کر انہیں زندہ درگور کردےں انہیں حق حکمرانی نہیں دیا جاسکتا ۔انہوں نے کہا کہ اقتدار پر قابض ٹولہ عوام کے حقوق غصب کررہا ہے ،عوام کو دھوکہ دینے کیلئے یہ انتخابات میں پارٹیاں ، جھنڈے اور نعرے بدلتے ہیں اور ایک نئے چہرے کے ساتھ عوام کو دھوکہ دینے کیلئے آجاتے ہیں ۔ سیاسی شہزادوں اور خانزادوں کے ہردورمیں وارے نیارے ہوتے ہیں ۔پارٹیوں کو ان لٹیروں نے پراپرٹیاں بنا رکھا ہے ،عوام تعلیم صحت اور روز گارکی بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں جبکہ خود کو عوام کے خادم قرار دینے والوں کے بچے لندن اور پیرس اورواشنگٹن کے سکولوں میں پڑھتے ہیں اور سر درد ہو تو یہ علاج کیلئے باہر بھاگ جاتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کی ساری جدوجہد کا مقصد اس استحصالی اور ظالمانہ نظام کا خاتمہ اور عدل و انصاف کی حکمرانی کا قیام ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ مشاہد اللہ کے بیان سے واضح ہوگیا ہے کہ حکومتی پارٹی کے اندر عدم یکسوئی ہے جس کی وجہ سے یہ حادثات پیش آرہے ہیں۔ ایک دوسرے سوال کے جواب میں سراج الحق نے کہاکہ عوام سیاست اور جرائم کو علیحدہ دیکھنا چاہتے ہیں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s