مودی کی موجودگی میں جنوبی ایشیاءکے امن کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں ۔مودی کی انتہا پسندی اور مسلم کش رویے نے خطے کے امن کو تہہ و بالاکردیا ہے ۔مودی ایک فسادی ہے جس نے بھارتی اور کشمیری مسلمانوں پر زندگی اجیرن کررکھی ہے ۔مودی ہزاروں مسلمانوں کا قاتل ہے ۔سراج الحق کا بریڈ فورڈ میں پاکستانیوں سے خطاب

sirajulhaq

لاہور24گست 2015ء
امیرجماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ مودی کی موجودگی میں جنوبی ایشیاءکے امن کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں ۔مودی کی انتہا پسندی اور مسلم کش رویے نے خطے کے امن کو تہہ و بالاکردیا ہے ۔مودی ایک فسادی ہے جس نے بھارتی اور کشمیری مسلمانوں پر زندگی اجیرن کررکھی ہے ۔مودی ہزاروں مسلمانوں کا قاتل ہے ۔پاکستان اور بھارت کے درمیان ہونے والے مذاکرات مودی کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے سبو تاژ ہوئے ،بھارتی وزیر اعظم یورپ اور امریکہ سمیت دنیا کے جس ملک میں بھی جائے گامسلمان اس کے خونخوار چہرے کو بے نقاب کریں گے اور اس کی آمدپر ہر جگہ احتجاج کیا جائے گا ۔کشمیر کا مسئلہ برطانیہ ہی کا چھوڑا ہوا ہے، جس کی وجہ سے نصف صدی سے زائد عرصے سے دونوں ملکوں کے درمیان تنازعہ چل رہا ہے ،برطانیہ کا فرض ہے کہ وہ مسئلہ کشمیراقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہش کے مطابق حل کرانے میں اپنا کردار ادا کرے۔ جماعت اسلامی کے مرکزی میڈیا سیل کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے برطانیہ کے شہر بریڈ فورڈ ،نیلسن اور برلے میںپاکستانی کمیونٹی کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اجتماعات سے امیر جماعت اسلامی آزاد کشمیر عبد الرشید ترابی ،لارڈنذیر احمد اور یوکے اسلامک مشن کے صدر ڈاکٹر زاہد پرویز نے بھی خطاب کیا۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ دنیا بھر میں مسلمان انتہاپسندی اور دہشت گردی کا شکار ہیں ۔ہر جگہ میں مسلمانوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹا جارہا ہے ،اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق سات لاکھ مہاجرین میں سے 70 فیصد مسلمان ہیں لیکن ستم برائے ستم یہ ہے کہ مسلمانوں کو ظلم کا نشانہ بھی بنایا جارہاہے اور الٹا انہیں ظالم قرار دیا جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہر جگہ ہمارے اوپر جنگ مسلط ہے ،مسلمانوں کے شہروں اور بستیوں کو ملیا میٹ کیا جارہا ہے اور الزام بھی اسلام اور مسلمانوں پر دھر دیا جاتا ہے ،انہوں نے کہا کہ دنیا کو اپنے اس منافقانہ اور اسلام و مسلم دشمن رویے کو بدلنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو دنیا کے سامنے اسلام کے امن و آشتی کے پیغام کو پیش کرنا چاہئے ،مسلمان امن دشمن نہیں بلکہ دنیا میں امن کے قیام کے خواہاں اور اس کیلئے سب سے زیادہ قربانیاں پیش کررہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے ہمیں ایک ایسا نظام دیا ہے جسے آدم ؑ سے نبی آخرالزمان حضرت محمد ﷺ تک تمام انبیاءنے انسانیت کے سامنے پیش کیا اور بتایا کہ انسانوں کی بھلائی اسی نظام میں ہے ۔
سراج الحق نے کہا کہ جماعت اسلامی ملک سے سٹیٹس کو کے خاتمہ اور عام آدمی کو اس کے غصب شدہ حقوق دلانے کی جدوجہد کررہی ہے ۔ملک میں سالانہ ہونے والی ایک ہزار ارب روپے کی کرپشن کا خاتمہ کرکے ملک میں مفت علاج اور تعلیم کا بندوبست کیا جاسکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کا رویہ اور کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے ۔پولیس غریبوں پر جھپٹتی اور امیروں کو سلام کرتی ہے ۔وی آئی پی کلچر نے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جرائم میں ملوث بااثر لوگوں کو کھلی چھوٹ دے دی جاتی ہے اور غریبوں کا مسلسل استحصال کیا جارہا ہے ،جماعت اسلامی اس استحصالی اور ظالمانہ نظام کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا چاہتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ امیر اور غریب کیلئے علیحدہ قانون ہے ۔ہم ایسا نظام دینا چاہتے ہیں جس میں قانون کی نظر میں سب برابر ہوں۔انہوں نے قصور کے واقعہ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں لاقانونیت اور درندگی کا یہ سب سے بڑا واقعہ ہے جس میں سینکڑوں معصوم بچوں کو حیوانیت کا نشانہ بنایا گیا مگر جب ان کے والدین پولیس کے پاس فریادی بن کر گئے تو الٹا ان کے خلاف پرچہ درج کرکے انہیں ہراساں کیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ یہ ظلم اگر کسی امیر کے بچے کے ساتھ ہوتا تو اب تک حکومتی ایوانوں میں لرزا طاری ہوچکا ہوتا مگر چونکہ یہ غریبوں کے بچے تھے اس لئے ان کی طرف کسی نے دھیان نہیں دیااور وہ آج بھی انصاف کے حصول کیلئے در بدرٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s