اوباما خطے کو پرامن دیکھنا چاہتے ہیں تو افغانستان سے فوجیں نکالنے کا اعلان کریں ۔جب تک ایک بھی نیٹوفوجی موجود ہے افغانستان میں امن قائم نہیں ہوسکتا ۔مودی خطے پر جنگ مسلط کرنا چاہتا ہے مگر اسے سمجھ لینا چاہئے کہ پاکستان 1948والا پاکستان نہیں بلکہ ایک ایٹمی قوت ہے ۔اگر مودی نے جارحیت کی غلطی کی تو اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے ۔ سینیٹر سراج الحق کا وادی سون میں بڑے جلسہ عام سے خطاب 

j
لاہور16اکتوبر2015ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ اوباما خطے کو پرامن دیکھنا چاہتے ہیں تو افغانستان سے فوجیں نکالنے کا اعلان کریں ۔جب تک ایک بھی نیٹوفوجی موجود ہے افغانستان میں امن قائم نہیں ہوسکتا ۔مودی خطے پر جنگ مسلط کرنا چاہتا ہے مگر اسے سمجھ لینا چاہئے کہ پاکستان 1948والا پاکستان نہیں بلکہ ایک ایٹمی قوت ہے ۔اگر مودی نے جارحیت کی غلطی کی تو اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے ۔حکمران بھارت کو سرپر چڑھانے سے باز رہیں ۔دوستی کی باتیں ،فنکاروں کے تبادلے اور کرکٹ ڈپلو میسی کشمیر کی جدوجہد آزادی سے غداری ہے ۔جن مقاصد کیلئے پاکستان حاصل کیا تھا اشرافیہ نے آج تک انہیں پورا نہیں ہونے دیا،جن سیاسی پنڈتوں اور برہمنوں نے ملک کو موجودہ حالات سے دوچار کیا اور عوام کا خون چوسا ہے وہ قوم کے مجرم ہیں ۔عوام اپنے ووٹ کی قوت سے مہنگائی ،بے روز گاری ،بدامنی اور لاقانونیت کو مسلط کرنے والوں کو شکست دیں ۔جماعت اسلامی مسلکی ،علاقائی اور قومیت کے تعصبات سے بالاتر ہوکر قوم کو متحد کرنا چاہتی ہے۔قوم کا اتحاد ایٹم بم سے زیاد ہ طاقت رکھتا ہے ۔ جماعت اسلامی کے مرکزی میڈیا سیل کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے وادی سون نوشہرہ میں بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔جلسہ سے ضلعی امیر ملک وارث جسرہ اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔جلسہ میں عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکمرانوں کے مسلط کردہ ظالمانہ اور استحصالی نظام سے نجات کیلئے حضرت امام حسین ؓ کی طرح یزیدی قوتوں کے خلاف اٹھ کھڑا ہونا چاہئے ،حضرت امام حسین ؓ کی شہادت اور واقعہ کربلا کا ایک ہی درس ہے کہ ظلم و جبر کو کسی صورت بھی برداشت نہ کیا جائے اور وقت کے یزید کے گریبان میں ہاتھ ڈال کر اسے ظلم سے باز رکھا جائے ۔انہوں نے کہا کہ 70سال سے قوم انہی سیاسی پنڈتوں اور برہمنوں کے حصار میں ہے جنہوں نے انگریز سے وفاداری اور قوم سے غداری کے عوض جاگیریں اور جائیدادیں بنائیں اور پھر دولت کے بل بوتے پر ملک کے تمام اداروں پر قبضہ کرکے انہیں اپنے مفادات کا اسیر بنایا ۔انہوں نے کہا کہ عوام سانپوں کو دودھ پلا کر اژدھا بنانے کی روش چھوڑ دیں ،ان سانپوں نے کئی بار قوم کو ڈسا ہے ۔عوام اٹھیں اور کرپٹ عناصر کیلئے آئندہ الیکشن کو یوم حساب بنادیں اور قیامت سے پہلے مجرموں کے لئے الیکشن کے دن قیامت صغریٰ برپا کردیں ۔انہوں نے کہاکہ اس ظالمانہ اور استحصالی نظام کو برداشت کرنا بھی جرم ہے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ جماعت اسلامی کا اسلامی و خوشحال پاکستان کا ایجنڈا تمام مسائل کا حل ہے ۔ہم ملک میں احتساب کا ایسا نظام چاہتے ہیں جس میں حکمران عوام کے سامنے جواب دہ ہوں اور عام شہری کو بھی وہی حقوق حاصل ہوں جو حکمرانوں کو حاصل ہیں ۔انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی اقتدار میں آکر ملک میں تعلیم اور صحت کا یکساں نظام رائج کرے گی جس میں محنت کشوں ،کسانوں اور مزدوروںکو بھی وہی سہولتیں ملیںگی جو وزیروں اور مشیروں کو حاصل ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی خواتین اور اقلیتوں کے حقوق کی محافظ ہے ،ہم چاہتے ہیں کہ کوئی ایسا فرد الیکشن نہ لڑسکے جو اپنی بہن کو موروثی جائیداد میں حصہ نہیں دیتا۔انہوں نے کہا کہ ہم اقتدار میں آکر بزرگ شہریوں کوکفالت الاﺅنس دیں گے اور طالب علموں کو اعلی تعلیم کیلئے اور خواتین کو کاروبار کیلئے بلاسود قرضے دیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ اس قوم کا المیہ ہے کہ اقتدار پر قابض لوگ تمام وسائل کو لوٹ کر اپنی دولت میں اضافہ کررہے ہیں اور غریبوں کا کام صرف ٹیکس اور ووٹ دینا رہ گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پنجاب کے چوہدری ،سندھ کے وڈیرے ،بلوچستان کے نواب اور سردار اور خیبر پختونخواہ کے خوانین نے ہمیشہ عوام کی پریشانیوں میں اضافہ کیا ہے ۔یہ لوگ نہیں چاہتے کہ کسی غریب کی رسائی اقتدار کے ایوانوں تک ہو،یہ لٹیروں کا ایک ٹولہ ہے جو قومی دولت کو ہڑپ کررہا ہے ،انہوں نے کہاکہ چہرے اور پارٹیاں بدل کر اقتدار میں آنے والے چند خاندانوں کے شہزادے خود کو ہر قسم کے قانون اور احتساب سے بالاتر سمجھتے ہیں ۔سیاسی پارٹیوں کو انہوں نے اپنے لئے ڈھال بنا رکھا ہے ،باپ ایک پارٹی میں ہے تو بیٹا دوسری اور چچا یا ماموں ایک پارٹی میں اور بھتیجا بھانجا دوسری پارٹی میں ہے ۔انہوں نے کہاکہ کرپشن مافیا سے نجات کیلئے عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دیں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s