الیکشن کمیشن انتخابات میں دولت کے استعمال کو روکنے میں ناکام ہوچکا ہے۔ حکمران جماعت انتخابی اصلاحات کے راستے میں روڑے اٹکا رہی ہے۔ ملک پر اشرافیہ کے نام پر بدمعاشیہ قابض ہے۔ ملک کو موجودہ بحرانوں سے نکالنے کی صلاحیت صرف جماعت اسلامی کے پاس ہے۔اسلامی نظام اور دین کے غلبے کا واحد راستہ انتخابات کا راستہ ہے۔ اسلامی پاکستان خوشحال پاکستان ہمارا ویژن ہے۔ امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان

Mushtaq sb

امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن انتخابات میں دولت کے استعمال کو روکنے میں ناکام ہوچکا ہے۔ حکمران جماعت انتخابی اصلاحات کے راستے میں روڑے اٹکا رہی ہے۔ ملک پر اشرافیہ کے نام پر بدمعاشیہ قابض ہے۔ ملک کو موجودہ بحرانوں سے نکالنے کی صلاحیت صرف جماعت اسلامی کے پاس ہے۔اسلامی نظام اور دین کے غلبے کا واحد راستہ انتخابات کا راستہ ہے۔ اسلامی پاکستان خوشحال پاکستان ہمارا ویژن ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے المرکز الاسلامی پشاور میں 2018ء کے قومی انتخابات کی تیاریوں کے حوالے سے منعقدہ دوروزہ سیمینار کے پہلے روز اپنے خطاب میں کیا۔ سیمینار میں جماعت اسلامی خیبر پختونخوا کے سابق امیر پروفیسر محمد ابراہیم خان، سیکرٹری جنرل شبیر احمد خان، نائب امراء ڈاکٹر محمد اقبال خلیل، معراج الدین خان ایڈووکیٹ ، حکیم عبدالوحید، ڈپٹی سیکرٹری جنرل عبدالواسع اور سیاسی کمیٹی کے سیکرٹری بحر اللہ خان سمیت کرک بنوں ڈیرہ اسماعیل خان اور ہنگو کے امراء اور سیاسی کمیٹیوں کے سربراہان بھی موجود تھے۔ نومنتخب امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ انتخابات میں پیسے اور دولت کا استعمال ناسور بن چکا ہے۔ الیکشن کمیشن انتخابات میں پیسے کے استعمال کو روکنے میں بری طرح ناکام ہے۔ انتخاب لڑنا اب غریب کے بس کی بات نہیں بلکہ یہ امیروں کا کھیل بن چکا ہے۔ انتخابی نظام میں اصلاحات کی سخت ضرورت ہے لیکن حکمران جماعت نہیں چاہتی کہ اس میں اصلاحات ہوں۔ حکمران جماعت انتخابی اصلاحات میں روڑے اٹکا رہی ہے اور وہ اس میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ انتخابی عمل کو شفاف بنانا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ پارٹیاں اور امیدواران دولت کے بل بوتے پر اور جعلی طریقوں سے انتخابی عمل کی شفافیت کو سبوتاژ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات کے بعد بلدیاتی نمائندے 2018ء کے انتخابات میں مؤثر کردار ادا کریں گے۔ 2018ء کے انتخابات میں خیبر پختونخوا میں جماعت اسلامی بہترین حکمت عملی کے ساتھ میدان میں اترے گی ۔ بلدیاتی انتخابات میں جماعت اسلامی صوبے کی دوسری بڑی قوت بن کے ابھری ہے ۔ انشاء اللہ 2018ء کے قومی انتخابات میں کامیابی ھاصل کرکے صوبے کی نمبر ایک سیاسی جماعت بن کے دکھائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملک پر اشرافیہ کے نام پر بدمعاشیہ قابض ہے جن کا ایک نکاتی ایجنڈا لوٹ کھسوٹ کے سوا کچھ نہیں۔ جماعت اسلامی اس بدمعاشیہ سے قوم کو نجات دلائی گی۔2018ء کے انتخابات میں جماعت اسلامی کے وژن اسلامی پاکستان خوشحال پاکستان کو حاصل کریں گے۔ انہوں نے ہر سطح کے نظم پر زور دیا کہ اس وژن کے حصول کے لئے دن رات ایک کردیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s