پاکستان اور آزاد کشمیرکے حکمران اور عوام مل کر 2016ءکو آزادیءکشمیرکا سال منائیں،سراج الحق

01

لاہور 27اکتوبر2015 ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پاکستان اور آزاد کشمیرکے حکمران اور عوام مل کر 2016ءکو کشمیرکی آزادی کا سال منائیں،کشمیرکی آزادی کے بغیر دنیا میں امن قائم نہیں ہوسکتا،بھارت 8لاکھ فوج کے ذریعے کشمیریوںکو غلام نہیں رکھ سکتا،میری زندگی کی آخری سانس اور خون کا آخری قطرہ کشمیرکی آزادی کے لیے ہے حکومت پاکستان آزاد خطے کو وسائل فراہم کرے تاکہ ا س کو ایک ماڈل خطہ بنایا جائے ۔ جماعت اسلامی کے مرکزی میڈیا سیل کے پریس ریلیز کے مطابق ان خیالات کا اظہار انھوںنے جما عت اسلامی ہٹیاں بالا(آزاد کشمیر)کے زیر اہتمام یوم سیاہ کے موقع پر خطا ب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر مسلم لیگ ن کے صدر راجہ فاروق حیدر،امیر جماعت اسلامی عبدالرشید ترابی،پیپلزپارٹی کے لطیف اکبر اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔
سینیٹر سراج الحق نے اپنے خطاب میں کہاکہ 27اکتوبر یوم سیاہ ہی نہیں یوم جبر بھی ہے یوم ظلم بھی ہے،اس دن ہندوستان نے سو ا کروڑ انسانوں کے بنیادی حق کو غصب کرنے کے لیے فوج کشی کی ،انھوںنے کہاکہ 1947میں بے سروسامانی کی حالت میں کشمیریوںنے جنگ لڑی آج کشمیری نوجوان پرعزم ہے اور طاقت ور بھی ہے اب آزادی کی منزل کو کوئی روک نہیں سکتا،مودی کی انتہا پسندانہ پالیسیوں کے باعث ہندوستان کے اندر عیسائی ،سکھ ،مسلمان اور دیگر مذاہب کے لوگ بھی متاثر ہو رہے ہیں ایک ممبر پارلیمنٹ نے کہاکہ اگر مودی نے یہ کاروائی جاری رکھی تو ہندوستان کے اندر ایک اور پاکستان بنے گا،بھارت کشمیرمیں جو مظالم ڈھاتا ہے ہماری ماﺅں اور بہنوں کی فریاد سنتا ہوں تو مجھے اپنی ماں اور بہن یاد آتی ہے میں وہ دکھ محسوس کرتا ہوں جو اپنی ماں کے لیے اور اپنی بہن کے لیے محسوس کرتا ہوں۔میں نے پوری کشمیری قیادت کو جمع کیا اور ان سے کہاکہ آپ اپنے ذاتی اور پارٹی اختلافات کو ایک طرف رکھ کر کشمیرکی آزادی کے ون پوائنٹ ایجنڈے پر ایک ہوں،میں حکومت پاکستان سے بھی کہتا ہوں او ر میں نے مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی اور ان سے کہاکہ وہ آل پارٹیز کانفرنس بلوائیں اور اس میں طے کریں کہ کشمیرکی آزادی کے لیے ہم ایک ہیں ،متحد ہیں اوریکجا ہیں،مقبوضہ کشمیرکے اندر سید علی گیلانی کی قیادت میں حریت کا متحد ہونا خوش آئند ہے،کشمیرکے اس طرف بھی اتحاد اور اس طرف سے اتحاد ہوگا تو ہم بڑی طاقت ہوںگے،ہمیں کوئی طاقت شکست نہیں دے سکتی،انھوںنے کہاکہ حکومت پاکستان ہندوستان کے ساتھ آلو پیاز کی تجارت نہ کرے صرف کشمیر پربات کرے یہ شہداءکے خون کا تقاضاہے،اتحاد ہی ہماری طاقت ہے،ہم امن چاہتے ہیں مگر ہندوستان طاقت کے ذریعے امن کو تباہ کررہاہے،انھوںنے کہا کہ زلزلہ کے موقع پر اور سیلاب کے موقع پر کشمیریوں کے شانہ بشانہ ہیں آج پاکستان میں پھر زلزلہ آیا ہے پوری قوم ان کی مدد کے لےے آگے آئے،عزم آزادی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عبدالرشید ترابی نے کہاکہ کشمیری تقسیم برصغیر کے نامکمل ایجنڈے کی تکمیل کی جدوجہد کررہے ہیں،آج کے منحوس دن ہندوستان نے کشمیرپر جبری قبضہ کیا تب سے آج تک یہ آزادی کی جدوجہد جاری ہے،آزادی کی اس جدوجہد میں قبائل نے ہماری مدد کی سراج الحق کے ضلع سے 2ہزار سے زائد شہداءہیں اسی طر ح باقی قبائل نے مدد کی ،سراج الحق نے قاضی حسین احمد کے چھوڑے ہوئے مشن کو جاری رکھا ہوا ہے پانچ فروری ہویا یوم سیاہ یا اور کوئی کشمیریوں پر مصیبت ہو سراج الحق ہمارے درمیاں ہوتے ہیں،انھوںنے کہاکہ آزادی اور نظام کی تبدیلی ہمارا مشن ہے یہ مشن کامیابی تک جاری رہے گا۔
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s