حکومت نے پی آئی ملازمین کو قتل کرکے تاریخی ظلم کیا ہے۔بڑے سانحے کی ایف آئی آر درج نہ کرکے ظلم پر ظلم کیا ہے ،مسئلہ صرف اداروں کی نیلامی کا نہیں اداروں سے کرپشن کے خاتمے کا ہے۔سینیٹرسراج الحق کا پشاور میں پی آئی اے ملامین کےحتجاجی دھرنے اور قران خوانی میں شرکت کے بعد خطاب

_MG_9995

پشاور4فروری2016 ؁ء
پشاور( )امیر جماعت اسلامی پاکستان سینٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ پی آئی اے پوری دنیا میں پاکستان کی عزت ، وقار اور سفیر ہے ۔حکمرانوں نے پی آئی اے کے تین ملازمین کو قتل کر کے اپنے عزت ، وقار اور سفیر کو قتل کیا ہے ۔موجودہ وقت میں پاکستان جس دہشت گردی کا شکار ہے اس کی بنیاد ی کردار خود حکومت ہے جو نہتے احتجاجی مظاہرین پر گولی کا راستہ اختیار کرتا ہے ۔ احتجاج اور مذاکرات جمہوریت کا حصہ ہے پرامن احتجاجی مظاہرین پر حکومت نے گولیاں چلاکر فاشزم کیا ہے ۔ پچھلے تین مہینوں میں پی آئی اے نے ساڑھے تین ارب روپے منافع کمایا ہے حکمران ایک منافع بخش ادارہ کو فروخت کر کے ٹھیکیداروں اور سرمایہ داروں کو نواز نا چاہتے ہیں۔حکمرانوں کو بے گناہ ملازمین کے خون کا حساب دیناہوگا ۔ حکمران قومی اداروں کو فروخت کرنے کی بجائے کرپشن پر قابو پائیں اور مینجمنٹ کو ٹھیک کریں۔مسئلہ صرف اداروں کی نیلامی کا نہیں ، نظام کا ہے عوام ان ظالم ٹھیکیداروں سے نجات اور عادلانہ و منصفانہ نظام کے لیے اٹھ کھڑے ہوں ۔نواز حکومت نے بے گناہ لوگوں کو قتل کر کے خود اپنے حکومت کے خلاف فیصلہ دے دیا ہے کہ وہ مزید حکمرانی کے حق دار نہیں ہے ۔ وہ پشاور میں پی آئی اے ملازمین کے احتجاجی مظاہر ے سے خطاب کررہے تھے ۔ اس موقع پر سینئر صوبائی وزیر عنایت اللہ خان ، وزیر خزانہ مظفر سید ، وزیر مذہبی امور حاجی حبیب الرحمان ، نائب امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا ڈاکٹر محمد اقبال خلیل ، پی آئی اے جائنٹ ایکشن کمیٹی کے صدر سجا د احمد ، چیرمین کفایت اللہ ، امیر جماعت اسلامی ضلع پشاور صابرحسین اعوان ، الخدمت تاجران کے صدر عبدالقادر صراف ، کنٹونمنٹ بور ڈ کے وائس چیئر مین حاجی وارث خان اور دیگر قائدین بھی موجود تھے ۔ امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے جاں بحق ملازمین کے لیے ختم القرآن میں حصہ لیا اور دعاء کی ۔ اس موقع پر سراج الحق نے مظاہر ین سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے تاریخی ظلم کیا ہے ۔ حکومت پی آئی اے کی نجکاری اور یہاں پرٹھیکیداری نظام لانا چاہتے ہیں جس کو عوام نے بھی مستر د کر دیااور پارلیمنٹ میں ممبران کی اکثریت اور تمام سیاسی جماعتیں بھی اس کے خلاف ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں جن ملازمین کا خون بہایا گیا ہے ان کا ایف آئی آر فوری طور پر درج کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ اس کا مطلب یہ ہے کہ جو ظلم کچھ عرصہ قبل ماڈل ٹاؤن لاہور میں ہوا تھا اور چودہ لوگ شہید کیے گئے اور ان کی ایف آئی آر بھی درج نہیں کی گئی تھی اور لوگ مجبور ہوکر اسلام آباد میں دھرنے دینے پہنچ گئے ۔ انہوں نے کہاکہ جاں بحق افراد کا ایف آئی آر نہ کاٹنا ظلم کے اوپر ظلم ہے ۔سینیٹر سراج الحق نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر پی آئی اے خسارے میں ہے تو حکومت انتظامیہ کو بہتر بنائے ، کرپشن کا خاتمہ کریں ،تمام فیصلے میرٹ پر کریں اور منافع میں ملازمین کو شریک کیا جائے لیکن حکمرانوں نے کرپشن کے خاتمے اور انتظامیہ کو بہتر بنانے کے بجائے پی آئی اے کے نجکاری کا فیصلہ کرلیا جس کو ہم مسترد کرتے ہیں اور ہم اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے کے حق میں ہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s