قومی ایئر لائن کے ملازمین کی طرف سے فلائٹ آپر یشن کی جزوی بحالی کا خیرمقدم کرتے ہیں ۔ مزدوروں نے حکمرانوں کی انا اور ضد کو شکست دی ہے ۔سینیٹر سراج الحق

20160206_172810_001
لاہور7فروری 2016ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے پی آئی اے ملازمین کی طرف سے ملک بھر میں فلائٹ آپریشن کی جزوی بحالی کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مزدوروں نے حکمرانوں کی انا اور ضد کوشکست دیدی ہے اور ملک و قوم کی خاطر اپنا مفاد قربان کرکے ثابت کردیا ہے کہ ملک کی خاطر قربانی غریب اور مزدور طبقہ ہی دے سکتا ہے ،اگر مزدور بھی حکمرانوں کی طرح ضد اور انا پرستی پر قائم رہتے تو پوری دنیا میں پاکستان مذاق بنا رہتا۔ملک کے ایئر پورٹس دو ہفتے تک تماشا بنے رہے مگر سرکار عدم برداشت کا رویہ ترک کرنے کو تیار نہیں ہوئی ۔ حکمرانوں نے قومی اداروں کی بحالی کیلئے آج تک کسی سنجیدہ رویے کا اظہار نہیں کیا ،پی آئی اے سمیت دیگر اداروں کی نجکاری اداروں کی بحالی اور استحکام کیلئے نہیں بلکہ آئی ایم ایف کے دباﺅ پر اور مزید قرضے لینے کیلئے کی جارہی ہے ۔حکمرانوں کی کوشش ہے کہ جانے سے پہلے گھر کے برتن بھی بیچ کھائیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میںمختلف وفود سے ملاقاتوں کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک پر جمہوریت کے نام پر بدترین آمریت مسلط ہے ، مزدوروں پر زور آزمائی کرناکوئی بہادری نہیں ۔ حکمران قوم سے کیے گئے وعدوں میں سے تین سال میں کسی ایک وعدے کو پورا نہیں کرسکے ۔اداروں کی تباہی کا جواب حکمرانوں کو دینا پڑے گا۔حکمران اپنی نااہلی کا ذمہ دار کسی مزدور کو نہیں ٹھہرا سکتے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکومت کے گڈگورننس کے تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں ،حکمرانوں کے پاس غربت اور جہالت کے خاتمہ کیلئے کوئی روڈ میپ نہیں ۔ چند نمائشی اقدامات سے غریب کا پیٹ بھرتا ہے نہ اس کے زخموں پر مرہم رکھا جاسکتا ہے ۔حکمران اپنی بیرون ملک پڑی دولت کو قومی بنکوں میں لے آئیں تو نہ صرف ورلڈ بنک اور آئی ایم ایف کی غلامی سے نجات مل سکتی ہے بلکہ عوام کو تعلیم ،صحت اور روز گار کی سہولتیں بھی فراہم کی جاسکتی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ شدید سردی میں بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ جاری ہے ،جبکہ گیس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کردیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ غیر ترقیاتی اور وی آئی پیز کے پروٹوکول پر اٹھنے اخراجات ختم کرکے نوجوانوں کو روز گار دیا جاسکتا ہے جس سے قومی آمدن میں بھی اضافہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ جس معاشرے میں تعلیم مہنگی ہو وہاں موت سستی ہوتی ہے یہی وجہ ہے کہ ملک میں بدامنی ،خوف ،مایوسی و ناامیدی کا راج ہے ۔حکومت عوام کو جان مال اور عزت کا تحفظ دینے میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے اور چھوٹی مچھلیوں کو پکڑا اور بڑے بڑے مگر مچھوں کو بچایا جارہا ہے ۔
 
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s