امریکہ کی طرف سےپاکستان کو ایف سولہ طیاروں کی فروخت کی منظوری سے بھارت آگ بگولہ ہوگیاہے اور نئی دہلی میں مقیم امریکی سفیر کو طلب کر کے باقاعدہ احتجاج کیا ہے ۔ حکومت پاکستان بھارت کے بار ے میں اپنی نرم پالیسی پر نظر ثانی کرے ۔حکومت اور اپوزیشن ذاتی مفادات کے لیے متحد ہو جاتی ہے جبکہ عوام کے مسائل اور پریشانیوں کا انہیں احساس تک نہیں ہے ۔سینیٹر سراج الحق

12237957_1084435108241664_6997985444150726340_o

لاہورفروری2016ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ امریکہ کی طرف سے پاکستان کو ایف سولہ طیاروں کی فروخت کی منظوری سے بھارت آگ بگولہ ہوگیاہے اور نئی دہلی میں مقیم امریکی سفیر کو طلب کر کے باقاعدہ احتجاج کیا ہے ۔ حکومت پاکستان بھارت کے بار ے میں اپنی نرم پالیسی پر نظر ثانی کرے ۔حکومت اور اپوزیشن ذاتی مفادات کے لیے متحد ہو جاتی ہے جبکہ عوام کے مسائل اور پریشانیوں کا انہیں احساس تک نہیں ہے ۔ صوبہ پنجاب کی اسمبلی کے ارکان نے متفقہ طور پر اپنی تنخواہوں اور مراعات میں ڈبل اضافہ کر لیاہے ۔ اسمبلی میں اکثریت اشرافیہ سے تعلق رکھنے والے ارکان کی ہے ۔ عوام غربت کی چکی میں پس رہے ہیں ۔ مہنگائی نے ان کا جینا حرام کر رکھاہے ۔ دوا ساز کمپنیوں نے جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں 70 سے 120 فیصد تک اضافہ کر دیاہے لیکن حکومت کی کان پر جوں تک نہیں رینگی اور نہ ہی اپوزیشن نے اس کا کوئی سنجیدہ نوٹس لیاہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ 
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ پوری دنیا سے بھارت نے اسلحہ خرید کر اس کے انبار لگا رکھے ہیں ۔ بھارت کو کس سے خطرہ ہے۔ آئے دن پاکستان کو بھارت کے ذمہ داران کی طرف سے سبق سکھانے کی دھمکیاں مل رہی ہیں ۔ پاکستان کے خلاف اس کی نفرت کا یہ عالم ہے کہ پاکستان کو اپنے دفاع کے لیے امریکہ نے چار جہاز کیا دئیے اس کو آگ لگ گئی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان نے بھارت کے خلاف کبھی جارحیت کا ارتکاب نہیں کیا جبکہ بھارت نے پاکستان پر دو جنگیں مسلط کیں اس کا ایک حصہ کاٹ کر بنگلہ دیش بنادیا اور وزیراعظم مودی اس کا اعتراف بھی کر چکے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستانی حکمرانوں کی نرم پالیسی اور بھارت سے دوستی کی خواہش نے گیدڑ کو شیر بنا دیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت اپنے رویے میں تبدیلی لائے اور بھارت کے ساتھ آلو پیاز کی تجارت بند کر کے اس کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر اس کی دھمکیوں کا جواب دیا جائے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ کرپشن نے پورے معاشرے کو اپنی لپیٹ میں لے رکھاہے ۔ کرپشن کے خلاف جو ادارہ بنایا گیاہے وہ خود بھی کرپشن میں ملوث ہے ۔ کرپٹ افراد کے خلاف کمزور کیس تیار کیے جاتے ہیں جس کی وجہ سے عدالتوں سے بھی وہ رہا ہو جاتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ کرپشن کے خلاف پورے معاشرے کو متحد ہو کر نکلنا ہو گا ۔ جماعت اسلامی یکم مارچ سے کرپشن کے خلاف مہم شروع کر رہی ہے ۔ عوام ہمارا ساتھ دیں ۔ جب تک ملک سے کرپشن ختم نہیں ہو تی اور پاکستان کو اسلامی پاکستان نہیں بنایا جاتا ، ملک ترقی نہیں کر سکتا ہے نہ عوام کی غربت دور ہو سکتی ہے اور نہ اس کے مسائل حل ہوسکتے ہیں ۔ اس لیے قوم اس مہم میں جماعت اسلامی کا بھر پور ساتھ دے ۔ 
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s