امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کیلئے پشاور ہائی کورٹ میں رٹ دائر کردی،رٹ میں عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی فی بیرل قیمت کے تناسب سے پاکستان میں فی لٹرپٹرول کی قیمت40روپے سے مقرر کرنے کی درخواست کی گئی ہے

pic2

26فروری 2016ء
پشاور( )امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کیلئے پشاور ہائی کورٹ میں رٹ دائر کردی،رٹ میں عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی فی بیرل قیمت کے تناسب سے پاکستان میں فی لٹرپٹرول کی قیمت40روپے سے مقرر کرنے کی درخواست کی گئی ہے،گذشتہ کئی سالوں سے عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمتوں میں مسلسل کمی ہورہی ہے لیکن حکومت پاکستان عالمی مارکیٹ کے اس بڑے فائدے سے عوام کو محروم رکھ رہی ہے ،احاطہ عدالت میں امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا مشتاق احمد خان کی میڈیا سے گفتگو ،عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمتوں میں کمی اور پاکستان میں پٹرول کی قیمتوں میں کمی نہ کرنے کے خلاف جمعہ کے روز امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا مشتاق احمد خان نے باقاعدہ طور پر پشاور ہائی کورٹ میں رٹ دائر کرنے کے بعد احاطہ عدالت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں اپنی نچلی ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں اور گذشتہ پانچ چھ سال میں عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمتوں میں تسلسل کے ساتھ کمی ہوئی لیکن حکومت پاکستان عالمی مارکیٹ کے اس بڑے فائدے سے پاکستانی عوام کو محروم رکھ رہی ہے ہم نے اب عدلیہ سے اس لئے روجوع کیا ہے کہ عالمی مارکیٹ کے اس فائدے کو عوام تک منتقل کیا جاسکے انہوں نے کہا کہ اس وقت جو قیمتیں عالمی مارکیٹ میں مقرر ہیں ریفائنری سمیت تمام ٹیکسزملاکر بھی اسکی یہاں 40روپے فی لٹر قیمت ہونی چاہئے تھی لیکن یہاں کی اشرافیہ حکومت اپنی تجوریاں بھرنے اورعیاشیوں کیلئے عوام سے 75اور76 روپے فی لٹر وصول کررہی ہے جو ظلم ، استحصال اور سب سے بڑی کرپشن ہے اس میگا کرپشن کے خاتمے کیلئے جماعت اسلامی نے ملک بھر میں کرپشن فری پاکستان تحریک بھی شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ، اور ساتھ ہی ساتھ عدلیہ سے بھی رجوع کرلیا ہے ،انہوں نے کہا کہ کرپشن کی وجہ سے عوام کو ان تمام مسائل کا سامنا ہے اور ہم اس کرپشن کو پاکستان کی سالمیت اور بقاء کیلئے سب سے بڑا خطرہ تصور کرتے ہیں یہ امریکہ اور ہندوستان سے بھی ملک کیلئے بڑا خطرہ ہے اسلئے ملک بچانے کیلئے کرپشن کا خاتمہ ناگزیر ہے انہوں نے کہا کہ بہت جلد ہم ادویات کی قیمتوں میں نچلی سطح تک کمی کیلئے بھی عدلیہ سے رجوع کرینگے کیونکہ ادویات کی قیمتوں میں مسلسل اضافے سے لگ رہا ہے کہ حکومت فارماسوئٹیکل کمپنیوں کی کرپشن کی بہتی گنگا میں ہاتھ دھو رہی ہے یا فارماسوئٹیکل کمپنیوں کے سامنے بے بس ہے ادویات کی قیمتوں میں 120فیصد اضافہ عوام سے زندگی چھیننے کے مترادف ہے اور ادویات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے سے پاکستان میں زندگی مہنگی اور موت سستی ہوگئی ہے یہ مسائل پاکستان کیلئے سنگین خطرہ اور آئین کے آرٹیکل 37کی خلاف ورزی ہے ،انہوں نے کہا کہ حکمران مسلسل آئین کی خلاف ورزی کررہے ہیں اور آئین کی خلاف ورزی دہشت گردی اور ملک سے غداری کے زمرے میں آتی ہے یہ غداری اور حکومتی دہشت گردی صرف اور صرف اپنے اکاؤنٹس بھرنے، اربوں ڈالر بیرون ملک منتقل کرنے اوراور اپنے میگا کرپشن کو تحفظ دینے کیلئے کررہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خاتمے کیلئے جو ادارے قائم ہیں وہ گونگے بہرے بن چکے ہیں اور حکومت کے سامنے بے بس نظر آرہے ہیں انہوں نے کہا کہ سوارب ڈالرکا قطر سے معاہدہ حکمران ڈیل میگا کرپشن پراجیکٹ ہے ہر میگا پراجیکٹ میگا کرپشن کا ذرئعہ ہے اور اس میگا کرپشن کی وجہ سے پاکستان پر 70 ارب ڈالر کا قرضہ ہے پاکستان کے ایلیٹ اشرافیہ کے375ارب ڈالر بیرون ملک بینکوں میں پڑے ہوئے ہیں اس کرپشن کی وجہ سے آج پاکستان میں بجلی نہیں ادھیرے چھائے ہوئے ہیں اس کرپشن کی وجہ سے پاکستان کی اپنی پیداوار گیس کی سہولت سے عوام محروم ہیں،اس کرپشن کی وجہ سے 2کروڑ 20لاکھ بچے ہوٹلوں اور ورکشاپوں میں مزدوری پر مجبور ہیں اور تعلیم جیسے بنیادی سہولت اور حق سے محروم ہیں،کرپشن کی ناسور کی وجہ سے پاکستان کے تعلیم یافتہ نوجوان روزگار سے محروم ہیں پی آئی اے ،سٹیل مل،واپڈاور ریلوے جیسے اہم ادارے خسارے میں ہیں اور ان اداروں پر برائے فروخت کے بورڈ لگ گئے ہیں،انہوں نے کہا کہ اب یہ کرپشن پاکستان کیلئے اندرونی و بیرونی خطرات،ملیٹینسی،امریکہ اور ہندوستان سے زیادہ خطرناک ہوچکا ہے ،اور ہم سمجھتے ہیں کہ اس وجہ سے اب ملک کی سالمیت و بقاء خطرے میں ہے،انہوں نے کہا کہ ہم اس نتیجے پر پہنچ چکے ہیں کہ اگر پاکستان کو بچانا ہے،پاکستان کو ترقی یافتہ بنانا ہے، تو ملک سے کرپشن کا خاتمہ کرنا ہوگا انہوں نے کہا کہ حکومت عوام کو آئینی بنیادی حقوق جو آئین کے آرٹیکل37نے عوام کو دئے ہیں وہ حقوق حکومت عوام کو دینے میں ناکام ہوچکی ہے اور وجہ حکمرانوں کی کرپشن ہے انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خاتمے کیلئے جماعت اسلامی کا کرپشن فری پاکستان تحریک کا 27 فروری بروز ہفتہ کرک سے باقاعدہ آغاز ہوگا اور کرپشن کے خاتمے کیلئے اس کرپشن فری پاکستان تحریک کے تحت ہم قوم کے نو جوانوں ،طالب علموں ،علمائے کرام ،ہرطبقہ ہائے فکر سے بھی رجوع کرینگے اور اس وقت تک چھین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک ملک میں کرپشن کا خاتمہ نہیں ہوتاانہوں نے کہا کہ اب وہ وقت دور نہیں جب ملکی خزانہ لوٹنے اور قوم کا استحصال کرنے والے بڑے بڑے چوروں اور لٹیروں کوعوام احتساب کے کٹہرے میں لائینگے اور ان کو آنے والی نسلوں کیلئے عبرت کا نشان بنایں گے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s