تبلیغی جماعت کے ان اکابرین کے بستر انسانیت کے خلاف نہیں بلکہ یہ بسترے شیطان کے خلاف ایٹم بم ہیں۔ نیب نے بڑے بڑے مگر مچھوں سے مک مکا کیا ہواہے احتساب کے ادارے کرپٹ عناصر کےلئے سہولت کاروں کاکردار ادا کررہے ہیں ،چورچور کا احتساب نہیں کرسکتا کوئی بھی کرپٹ حکومت آج تک دوسری کرپٹ حکومت کا احتساب نہ کرسکی بلکہ احتساب کی بجائے آج تک ہر حکومت نے ایک دوسرے کو تحفظ فراہم کیا ہے۔سینیٹر سراج الحق کا کرک میںکرپشن فری پاکستان تحریک کے آغاز پر بڑے جلسہ سے خطاب 

S04
لاہور27فروری 2016ء
امیرجماعت اسلامی سینیٹرسراج الحق نے کہا ہے کہ نیب نے بڑے بڑے مگر مچھوں سے مک مکا کیا ہواہے احتساب کے ادارے کرپٹ عناصر کےلئے سہولت کاروںکاکردار ادا کررہے ہیں ،چورچور کا احتساب نہیں کرسکتا کوئی بھی کرپٹ حکومت آج تک دوسری کرپٹ حکومت کا احتساب نہ کرسکی بلکہ احتساب کی بجائے آج تک ہر حکومت نے ایک دوسرے کو تحفظ فراہم کیا ہے۔جماعت اسلامی نے کرپشن کے خلاف بھرپور انداز سے ملک بھر میں کرپشن فری پاکستان تحریک کا آغازخیبرپختونخواکے جنوبی ضلع کرک سے کردیا ہے اور یہ تحریک پورے ملک میں کرپشن کے خاتمے تک جاری رہے گی۔ اس تحریک کا اختتام ایک ترقی یافتہ اسلامی اور خوشحال پاکستان پر ہوگا۔ جماعت اسلامی کے مرکزی میڈیا سیل کے پریس ریلیز کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے کرک سے کرپشن فری پاکستان تحریک کے آغاز کے موقع پر منعقدہ بڑے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا،جبکہ اس موقع پر جلسہ گاہ میں موجود ہزاروں لوگوں نے کرپشن فری پاکستان تحریک کا حصہ بننے اور اسلامی پاکستان خوشحال پاکستان کے سفیر بننے کا امیر جماعت اسلامی سینیٹرسراج الحق کے ساتھ کھڑے ہوکر وعدہ کیا اس موقع پر جماعت اسلامی کرک کے امیر مولانا تسلیم اقبال ،ضلع بنوں کے امیر ڈاکٹر ناصر خان اور جماعت اسلامی یوتھ کے نائب صوبائی صدر محمد ظہور خٹک اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔
سینیٹرسراج الحق نے کہا کہ تعلیم و صحت کی سہولتیں شہریوں کو دیناحکومت کی ذمہ داری ہے۔ حکمرانوں کو آئین میں اختیارات کی دفعات تویادہیں مگر عوام کے حقوق اور مسائل پر اندھے بہرے اور گونگے بن جاتے ہیں حکمران آئین سے وفاداری کی بجائے بے وفائی اور غداری کررہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ ہمارا خیال تھاکہ تین بار حکومتیں کرنے کے بعد میاں نواز شریف اچھی حکمرانی کریں گے ۔میں جب رمضان میں مسجد نبوی میں اعتکاف میں تھا تو میاں نوازشریف بھی وہاں گئے ہوئے تھے ، میں نے انہیں کہا تھاکہ ملک کو سود سے پاک کردیں تو ہمارے حالات ٹھیک ہو جائیں گے۔ تین سال انہیں اب حکمرانی کرتے ہوئے ہوگئے ہیں مگر ایسا نہیں ہوسکا ۔ ان تین سالوں میں سود ی نظام کو تقویت ملی اور پاکستان کو اسلامی ریاست کی بجائے لبرل پاکستان بنانے کا باقاعدہ اعلان کیاسینیٹر سراج الحق کاکہنا تھاکہ پنجاب حکومت نے تبلیغی جماعت پر پابندی لگائی اور یہ بتایا گیا کہ انکے بستروں میں بم ہوتے ہیں لیکن میں ان حکمرانوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ وہ توبہ تائب ہوکر اللہ سے معافی مانگیں ،تبلیغی جماعت کے ان اکابرین کے بستر انسانیت کے خلاف نہیںبلکہ یہ بسترے شیطان کے خلاف ایٹم بم ہیںانہوں نے کہا کہ پنجاب میں ایسے قانون کی منظوری دی گئی ہے جس میں خواتین بااختیار ہونگی والد اپنی بیٹی سے جبکہ شوہر اپنی بیوی سے اونچی آواز میں بات کرنے پر حوالات میں ہوگا انہوں نے میاں شہباز شریف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف صاحب آپ پیرس یالندن کے وزیر اعلیٰ نہیں پنجاب کے وزیر اعلیٰ ہیں اس قانون کے نتیجے میں آپ نے امریکہ اور یورپ کو خوش کیا ہوگا اور یقینا وہاں سے آپ کو اچھے نمبر ملے ہونگے مگر آپ نے اللہ اور اسکے رسول ﷺ کو ناراض کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکمران ملک کو کس طرف لے جارہے ہیں کیا اس ملک کو امریکہ کی 52ویں سٹیٹ بنانا چاہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہم نے کرپشن فری پاکستان تحریک اسلئے شروع کی ہے کیونکہ پاکستان میں روزانہ بارہ ارب روپے کی کرپشن ہورہی ہے اور اس کرپشن میں حکمران ،بڑے بڑے آفیسرز اور اعلیٰ عہدوں پر فائز افراد ملوث ہیں ،انہوں نے کہا کہ نیب کے پاس دو لاکھ سے زیادہ درخواستیں جمع ہوچکی ہیں مگر نیب نے بھی بڑے بڑے مگر مچھوں سے مک مکا کرلیا ہے۔ کرپشن میں ملوث ایک شخص اربوں روپے کی کرپشن کرتاہے اس سے چند کروڑ وصول کرکے باقی معاف کریے جاتے ہیں کیا یہ پیسے انکے باپ کے ہیں کہ وہ معاف کردیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عوام کے حقوق کے لئے ہم آخری حد تک جائینگے اور ملک سے کرپشن کے ناسو ر کو ختم کریں گے۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کے کسی وزیر یا عہدیدار پر کرپشن کا الزام تک نہیں اسلئے کرپشن کے خلاف جہاد صرف جماعت 
اسلامی ہی کرسکتی ہے اسلئے کرپشن کے خلاف ہم میدان میں ہیں اور ملک بھر میں کرپشن فری پاکستان مہم جاری رکھیں گے۔
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s